آزادپتن ہائیڈل پاور منصوبے میں سستی بجلی پر توجہ مرکوزکی گئی، عاصم سلیم باجوہ

آزادپتن ہائیڈل پاور منصوبے میں سستی بجلی پر توجہ مرکوزکی گئی، عاصم سلیم ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل (ر)عاصم سلیم باجوہ نے کہاہے کہ آزادپتن ہائیڈل پاور منصوبے کے حوالے سے معاہدے پر دستخطوں کی تقریب ہوگئی، معاہدے میں سستی بجلی پر خصوصی توجہ مرکوزکی گئی ہے، یہ معاہدہ ایک سنگ میل ہے، نہ تو باہر سے ایندھن درآمد ہو گا اور نہ ہی غیرملکی زرمبادلہ ضائع ہوگا۔ پیر کو سماجی رابطوں کی ویب سائیٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک ٹوئیٹ میں معاون خصوصی اطلاعات اورچین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے چیئرمین عاصم سلیم باجوہ نے کہاکہ آزادپتن ہائیڈل پاور منصوبے کے حوالے سے معاہدہ ایک نیا سنگ میل ہے، انہوں نے کہاکہ اس منصوبے میں سبزترین اور سستی بجلی پر خصوصی توجہ مرکوز کی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ بجلی پیداکرنے کے اس طریقہ کے ذریعے نہ تو باہر سے ایندھن درآمد ہو گا اور نہ ہی غیرملکی زرمبادلہ ضائع ہوگا۔اس سے تین ہزار سے زائد روزگار کے موقع پیداہونگے اور 1.5ارب ڈاکر کی سرمایہ کار ی میں کوئی قرضہ نہیں۔انہوں نے کہاکہ پانی کے استعمال کیلئے پنجاب /آزادکشمیر کو سالانہ 1.38ارب روپے کی آمد ن حاصل ہوگی۔واضح رہے کہ آزادپتن ہائیڈل پاور منصوبے کے حوالے سے سی پیک اتھارٹی اور چین کی گیزوبا کمپنی کے درمیان معاہدے پر دستخط کر دیئے گئے ہیں۔

عاصم سلیم باجوہ

مزید :

صفحہ اول -