اسد عمر کی پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ کے تحت منصو بے مکمل کرنیکی ہدایت

  اسد عمر کی پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ کے تحت منصو بے مکمل کرنیکی ہدایت

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقیات اور خصوصی اقدامات اسد عمر کی زیر صدارت پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ (پی پی پی) موڈ کے تحت روڈ انفرااسٹرکچر کے مختلف منصوبوں کا جائزہ اجلاس ہوا، وفاقی وزیر منصوبہ بندی وترقی اسد عمر نے پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ کے تحت 200 ارب روپے کی لاگت کے "این 25 کراچی تا کوئٹہ روڈ" منصوبہ اور تقریبا 100 ارب روپے کی لاگت کے"میانوالی تا مظفرگڑھ روڈ" کے منصوبوں کے 31 مارچ 2021 تک ڈیزائن اور فزیبلٹی اسٹڈی کو مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ دونوں منصوبوں سے نجی شعبے کے اشتراک سے سڑک کے بنیادی ڈھانچے کی سہولیات کی فراہمی میں مدد ملے گی۔ پیر کو وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقیات اور خصوصی اقدامات اسد عمر کی زیر صدارت پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ(پی پی پی) موڈ کے تحت روڈ انفرااسٹرکچر کے مختلف منصوبوں کا جائزہ اجلاس ہوا، اجلاس میں چیئرمین نیشنل ہائی وے اتھارٹی کیپٹن سکندر قیوم، چیف ایگزیکٹو آفیسر پی پی پی اے ملک احمد خان اور سینئر عہدیدار نے شرکت کی، اجلاس میں بتایا گیا کہ سکھر حیدرآباد موٹر وے کے علاوہ سی ڈی ڈبلیو پی نے پبپلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت مزید دو منصوبے منظور کیے ہیں، جس میں پہلا منصوبہ تقریبا 200 ارب روپے کی لاگت کا "این 25 کراچی تا کوئٹہ روڈ" اور تقریبا 100 ارب روپے کی لاگت کا "میانوالی تا مظفرگڑھ روڈ" کے منصوبے شامل ہیں

منصوبوں کاجائزہ

مزید :

صفحہ اول -