مضر صحت کھانوں پر سیل ٹیسٹی ہوٹل ڈیرہ اڈا انتظامیہ کی آج طلبی

  مضر صحت کھانوں پر سیل ٹیسٹی ہوٹل ڈیرہ اڈا انتظامیہ کی آج طلبی

  

ملتان(سٹاف رپورٹر)زائد المیعاد گوشت و گلی سڑ ی سبزیوں کے استعمال‘ کھانوں میں مردہ مکھیاں پائی جانے پر سیل کئے گئے ٹیسٹی تکہ اینڈ بریانی ریسٹورینٹ کی انتظامیہ کی آج طلبی‘ ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی ہیئرنگ کے بعد جرمانے کا فیصلہ کریں گے۔بتایا گیا ہے کہ ٹیسٹی تکہ اینڈ بریانی ریسٹورینٹ ڈیرہ اڈا پر شہریوں کو مضر صحت کھانے کھلائے جا رہے تھے (بقیہ نمبر49صفحہ6پر)

جہاں حفظان صحت کے اصولوں کو یکسر نظر انداز کر دیا گیا تھا اور شہریوں کی آنکھوں میں دھول جھونک کرانہیں لذیذ کھانوں کا جھانسہ دے کر مضر صحت کھانے کھلائے جا رہے تھے اور ریٹ بھی من مرضی کے وصول کئے جا رہے تھے۔بیمار اور لاغر جانورو ں کا گوشت استعمال کیاجارہا تھا۔ زائد المیعاد گوشت کے پکوان بھی تیار کئے جارہے تھے جبکہ گلی سڑی سبزیاں بھی استعمال کی جا رہی تھیں‘ پانی کی تجزیاتی رپورٹ بھی نہیں تھی‘آئل بھی تبدیل نہیں کیاجا رہا تھا اور شہری اس سے بے خبر تھے اور آنکھیں بند کرکے اس ریسٹورینٹ کے کھانے کھا رہے تھے۔2 روز قبل پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے مذکورہ ریسٹورینٹ کو چیک کیا تو کچن میں صفائی کی صورتحال انتہائی ناگفتہ بہ تھی جبکہ مکھیوں کی بہتات تھی‘ کھانوں میں بھی مردہ مکھیاں پائی گئیں۔مضر صحت و زائد المیعاد گوشت بھی برآمد ہوا‘ گلی سڑی سبزیاں بھی برآمد کرلی گئیں۔ اس پر فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے ٹیسٹی تکہ اینڈ بریانی ریسٹورینٹ ڈیرہ اڈا کو سربمہر کر دیا اوردوران کارروائی 80کلو سے مضر صحت گوشت تلف کر دیا‘ گلی سڑی سبزیاں بھی تلف کر دیں۔ ٹیسٹی تکہ اینڈ بریانی ریسٹورینٹ ڈیرہ اڈا کے مالکان کی دوڑیں لگ گئیں اور انہو ں نے فوڈ اتھارٹی ٹیم کی کارروائی رکوانے کی بھرپور کوشش کی مگر کامیاب نہ ہو سکے۔فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے سفارش یا دباؤ قبول کرنے سے انکار کردیا۔معلوم ہوا ہے کہ ٹیسٹی تکہ اینڈ بریانی ریسٹورینٹ کی انتظامیہ کو طب کرلیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی آج اس کیس کی ہیئر نگ کریں گے اورمذکورہ ریسٹورینٹ کو جرمانہ کیاجائے گا‘ جرمانے کی ادائیگی کے بعد مشروط طور پر ڈی سیل کرنے کا آرڈر جاری کیاجائے گااوراس مانیٹرنگ کی جائے گی اور دوبارہ چیکنگ کی جائے گی۔فوڈ اتھارٹی کے ذرائع کے مطابق مضر صحت کھانوں سے بڑی تعداد میں شہری بیمار ہوئے‘ شہریوں کی صحت پر کسی صورت میں سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتا اور میرٹ پر رولز کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -