کراچی، موسلادھار بارش سے تباہی، چھتیں، دیواریں گرنے اور کرنٹ لگنے سے 8افراد جاں بحق، بجلی کا نظام درہم برہم 

کراچی، موسلادھار بارش سے تباہی، چھتیں، دیواریں گرنے اور کرنٹ لگنے سے 8افراد ...

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)شہر قائد میں مون سون کی پہلی بارش کے دوران مختلف حادثات میں 8 افراد جاں بحق ہوگئے اور ترسیل کا نظام بری طرح متاثر ہونے سے متعدد علاقوں میں بجلی کی فراہمی معطل اور سڑکوں پر برساتی پانی جمع ہونے سے شدید ٹریفک جام ہے۔ بارش کے دوران مکان کی چھتیں،دیواریں گرنے اور کرنٹ لگنے کے مختلف حادثات میں 8 افراد جاں بحق چکے ہیں۔ دوسری جانب بارش کے بعد شہر کے متعدد علاقوں میں بجلی کی فراہمی معطل ہوچکی ہے۔ایکسپریس نیوز کے مطابق شہرمیں 200سیزائدفیڈرزٹرپ کرگئے ہیں جس کے بعد  لیاری،بلدیہ،کیماڑی،کورنگی اورلانڈھی کے علاقے میں بجلی کی فراہمی معطل ہوچکی ہے۔ نیوکراچی،نارتھ کراچی،بفرزون،لیاقت ا?باد،اورنگی ٹاون  میں بھی بجلی کی فراہمی متاثر ہے۔موسم کی پہلی بارش سے شہر میں نکاسی آب کے ناقص نظام کے باعث شارع فیصل، کورنگی ایکسپریس وے، کورنگی روڈ سمیت شہر کی مختلف شاہراہوں پر برساتی پانی جمع ہونے کے باعث شدید ٹریفک جام ہوگیا جس کے باعث شہریوں کو مسائل کا سامنا ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق سرجانی میں 1 اعشاریہ دو، کلفٹن میں 6ملی میٹر،لانڈھی میں 3 اعشاریہ ایک ملی میٹر،اولڈ ائیرپورٹ پر 10 ملی میٹر،پی اے ایف مسرور میں 12ملی میٹر، پی اے ایف بیس فیصل میں 26ملی میٹر،ناظم آباد میں 22ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ شہر میں سب سے زیادہ بارش صدر میں 42 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔محکمہ موسمیات نے کراچی سمیت سندھ بھر میں موسلا دھار بارش سے اربن فلڈنگ کا خطرہ ظاہر کیا ہے۔ بارشوں کا سلسلہ ستمبر کے آخر تک برقرار رہے گا اور شہر میں مون سون کے کئی اسپیل بارش کا سبب بنیں گے۔شہر میں آج زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 39 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

کراچی بارش

مزید :

صفحہ اول -