میرپورخاص : آموں کی سالانہ نمائش کا آخری دن

میرپورخاص : آموں کی سالانہ نمائش کا آخری دن

  



میرپورخاص(آن لائن)میرپورخاص میں آموں کی سالانہ نمائش جاری ہے،نمائش میں رکھی گئی آموں کی 183 اقسام میں سندھڑی مقبولیت میں سرفہرست ہے۔شہید بے نظیر آڈیٹوریم میں آموں کی 50ویں سالانہ نمائش میں 2 سو سے زائد کاشتکاروں نیاسٹالز لگائے ہیں ، جہاں 183 مختلف اقسام کے آم رکھے گئے ہیں،بچوں اور خواتین سمیت شہریوں کی بڑی تعداد نمائش کا رخ کررہی ہے۔نمائش میں سندھڑی آم سب سے مقبول ہے۔

جس سے کپاس کی فصل خراب ہونے کی صورت میں کاشتکاروں کو کافی نقصان اٹھانا پڑ سکتا ہے ۔ زرعی ماہرین کے مطابق لشکری سنڈی کا حملہ شروع میں ٹکڑیوں کی شکل میں ہوتا ہے ۔مادہ پروانہ پتوں کی نچلی سطح پر گچھوں کی شکل میں انڈے دیتی ہے جو با آسانی نظر آتے ہیں ایسے پتوں کو توڑ کر انڈوں کے گھچوں اور چھوٹی سنڈیوں کو تلف کردیں۔زرعی ماہرین کے مطابق کاشتکار ہفتہ میں دوبار فصل کی باقاعدگی سے پیسٹ سکاؤٹنگ کریں اور کھیتوں کو جڑی بوٹیوں سے پاک رکھیں۔ بالخصوص اٹ سٹ لشکری سنڈی کا متبادل میزبان پودا ہے اس کی تلفی پر خصوصی توجہ دیں۔ فصل پر لشکری سنڈی کے حملہ کی صورت میں محکمہ زراعت کے مقامی زرعی ماہرین کے مشورہ سے سفارش کردہ زہر کا سپرے حملہ شدہ ٹکڑیوں پر کریں۔ کاشتکار ا س کیڑے سے ہونے والے نقصان سے آگاہی حاصل کر کے اور مندرجہ بالا انسدادی تدابیر پر عمل پیرا ہو کر کپاس کی فصل کی مناسب طور پر حفاظت کے ساتھ ساتھ اپنی آمدن میں بھی خاطر خواہ اضافہ کر سکتے ہیں۔

مزید : کامرس