بجٹ غریب عوام کو جینے کے حق سے محروم کرنے کی دستاویزہے، ابوالخیر محمد زبیر

بجٹ غریب عوام کو جینے کے حق سے محروم کرنے کی دستاویزہے، ابوالخیر محمد زبیر

  



لاہور(نمائندہ خصوصی )جمعیت علماء پاکستان (نورانی) وٍ ملی یکجہتی کونسل کے صدر ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیر محمد زبیرنے وفاقی بجٹ پر تبصرہ میں نواز حکومت کے بجٹ کو غریب عوام کو جینے کے حق سے محروم کرنے کی دستاویز قرار دیتے ہوئے کہا کہ بجٹ میں توانائی بحران کے خاتمے ، امن وامان کے قیام اور غریب عوام کا معیار زندگی بلند کرنے کیلئے کچھ نہیں ہے یہ محض امیروں کا بجٹ ہے جس میں ڈیری مصنوعات ،پولٹری فیڈ اورمنرل واٹر جیسی اشیاء پر بھاری ٹیکس عائد کر کے عوام کے حق پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے انہوں نے کہا کہ سودی نظام کا قیام اللہ سے کھلی جنگ ہے ، ایک اسلامی ملک میں جہاں 58فیصد غریب عوام خواک کے حوالے سے عدم تحفظ کا شکارہیں، 1973 ؁ء کے دستور کی دھجیاں اڑاتے ہوئے سودی نظام کے ذریعہ قومی خزانہ سے12کھرب 80ارب روپے سودکی ادائیگی پر خرچ کئے جائیں گے یہی نہیں بلکہ 16کھرب 25ارب کا خسارہ پورا کرنے کیلئے 200ارب روپے کے نئے ٹیکس لگا کرمہنگائی کے بے قابو جن کو کھلی چھوٹ دینے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ نوازلیگ کا بجٹ اس کے انتخابی منشور سے کھلی بغاوت ہے جس پر عوام کے ارمانوں کا خون کیا گیا ہے ۔

مزید : علاقائی


loading...