بیجنگ،کتے چور پر دیہاتیوں کا وحشیانہ تشدد

بیجنگ،کتے چور پر دیہاتیوں کا وحشیانہ تشدد

  



بیجنگ (نیوز ڈیسک) کتے چوری کرنے والے دو نوجوانوں کے خلاف چینی دیہاتیوں نے تشدد اور ظلم کی نئی داستان رقم کردی۔اخبار ’’پیپلز ڈیلی‘‘ کے مطابق ژی یانگ کاؤنٹی کے دیہات شیپنگ میں صبح سات بجے گاؤں والوں نے دو نوجوانوں کو کتے چوری کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑلیا۔ دیہاتیوں کا کہنا تھا کہ نوجوانوں نے دو کتوں کو مار ڈالا تھا اور ان کا گوشت کھانے کے لئے انہیں لے کر جارہے تھے۔ جلد ہی سارے گاؤں میں یہ خبر پھیل گئی اور گاؤں والوں نے دونوں کتا چوروں کو درخت کے ساتھ باندھ کر تشدد شروع کردیا۔ یہ تشدد 9 گھنٹے تک جاری رہا جس کے بعد مردہ کتوں کو چوروں کے گلے میں لٹکا دیا گیا۔ جب پولیس گاؤں میں پہنچی تو دیہاتیوں نے ملزم ان کے حوالے کرنے سے انکار کردیا۔ جب پولیس ملزموں کو اپنی گاڑی میں بٹھا کر روانہ ہونے والی تھی تو دیہاتیوں نے ان پر ڈنڈوں اور پتھروں سے حملہ کردیا۔ ان کا مطالبہ تھا کہ وہ ملزموں کا فیصلہ خود کریں گے یا پھر دوسری صورت میں انہیں دس لاکھ یووان (تقریباً ڈیڑھ کروڑ پاکستانی روپے) بطور ہرجانہ ادا کیا جائے۔ مقامی پبلک سیکیورٹی بیورو کے افسران اور ژی یانگ کاؤنٹی کے مقامی رہنماؤں نے تقریباً شام چھ بجے طویل مذاکرات کے بعد دیہاتیوں کو ٹھنڈا کیا جس کے بعد پولیس ملزمان کو لے کر روانہ ہوگئی۔

مزید : علاقائی