بھارتی پنجاب میں خانصتان تحریک کے نعرے ،پولیس کا سکھ مظاہرین پر دھاوا ،25 گرفتار

بھارتی پنجاب میں خانصتان تحریک کے نعرے ،پولیس کا سکھ مظاہرین پر دھاوا ،25 ...

  



 نئی دہلی(اے این این)بھارتی ریاست پنجاب کے اکل تخت سے ایک بار پھر خالصتان تحریک کے نعرے بلند ہونا شروع ، نئے عزم کے ساتھ اپنی جدوجہد آزادی کا آغاز کردیا۔ایک بھارتی اخبار کی رپورٹ کے مطابق صوبہ پنجاب کے دارالحکومت امرتسر میں شیرومانی اکالی دل کے حامیوں نے گولڈن ٹمپل پر سابق ممبرصوبائی اسمبلی دھیان سنگھ مند کی قیادت میں سکھوں کی روایتی چمکتی تلواروں کے علاوہ ’’خالصتان زندہ باد‘‘کے فلک شگاف نعرے بلند ہوئے ۔احتجاجی مظاہرے پر پنجاب پولیس نے ہلہ بول کر 25سکھ مظاہرین کو گرفتار کرلیا ۔آپریشن بلیو سٹار(گولڈن ٹمپل) کی31 ویں برسی کے موقع پر پولیس نے کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کیلئے سخت حفاظتی اقدامات کیے تھے ۔اس موقع پر برسی کی تقریب میں خالصتان تحریک کے رہنما سمرنجیت سنگھ مان کو خرابی صحت کی بناء پر اکل تخت نہیں پہنچ سکے ۔اس موقع پر گولڈن ٹمپل کے واقعہ میں قتل کیے جانے والے جرنیل سنگھ بھندراوالے کے خاندان کو اکل تخت کی جانب سے جتندر گیانی گورباچن سنگھ کے اعزاز سے نوازا گیا ۔اس موقع پر اکل تخت کے جتھے دار نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پوری دنیا میں سکھ کمیونٹی کے گولڈن ٹمپل (آپریشن بلیو سٹار)کے زخم ابھی مندمل نہیں ہوئے ۔واضح رہے کہ 1984ء میں آپریشن بلیو سٹار گولڈن ٹمپل کے افسوسناک سانحہ میں ہزاروں سکھوں کو تہ تیغ کیاگیا تھا ۔

خالصتان تحریک

مزید : صفحہ آخر