مسافروں کو اغوا کرنیکی اطلاع ، بس اڈوں کی سکیورٹی سخت کرنیکا حکم

مسافروں کو اغوا کرنیکی اطلاع ، بس اڈوں کی سکیورٹی سخت کرنیکا حکم
مسافروں کو اغوا کرنیکی اطلاع ، بس اڈوں کی سکیورٹی سخت کرنیکا حکم

  



لاہور(ویب ڈیسک)محکمہ داخلہ کی جانب سے پنجاب حکومت سمیت سکیورٹی اداروں کو پنجاب میں بسوں کو اغوا کرنے کے ساتھ پنجابیوں کو مارنے کے پلان بارے آگاہ کر دیا گیا جس کے فوری بعد ہنگامی بنیادوں پر پنجاب بھر میں ٹرانسپورٹ اڈوں پر فول پروف سکیورٹی انتظامات شروع کر دئیے گئے ہیں ۔

انٹر سٹی ٹرانسپورٹروں کو بھی طلب کرتے ہوئے ہدایات جاری کر دی گئی ہیں ۔ذرائع کے مطابق پراونشل انٹیلی جنس سنٹر محکمہ داخلہ کی جانب سے گزشتہ روز پنجاب حکومت ، آئی جی پنجاب اور محکمہ ٹرانسپورٹ کو مراسلہ بھجوایا گیا جس میں انکشاف کیا گیا کہ براہمداغ بگٹی کی جانب سے اپنے کمانڈر صمد خان کو ٹاسک دیا گیا ہے کہ ملتان ،ڈی جی خان اور ملتان کے روٹوں پر چلنے والی بسوں اور فلائنگ کوچز کو اغوا کیا جائے اور ان میں موجود پنجابیوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا جائے۔

گزشتہ روز پولیس حکام اور محکمہ ٹرانسپورٹ نے مراسلہ ملنے کے ساتھ ہی ہنگامی طور پر آدھے گھنٹے کے اندر انٹر سٹی ٹرانسپورٹ تنظیموں کی میٹنگ بھی بلائی ،سیکرٹریٹ میں صوبائی وزیر بلال یاسین اور سیکرٹری ٹرانسپورٹ پنجاب محمد شوکت کی سربراہی میں ہونے والی میٹنگ میں سی اور ڈی کلاس بس اڈوں کے مالکان اور ٹرانسپورٹ تنظیموں کے نمائندوں کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ سی و ڈی کلاس سٹینڈوں پرکیمرے نصب کریں فوری طور پر مسافروں کی چیکنگ کے لئے میٹل ڈیٹیکٹر خریدیں اور کم از کم دو مقامات پر مسافروں اور انکے سامان کی چیکنگ کریں۔

مزید : لاہور