سنگین بیماری میں مبتلا اس نوجوان لڑکی نے اپنی زندگی بچانے کیلئے اہم ترین آپریشن کروانے سے انکار کردیا،لیکن کیوں ؟وجہ ایسی جس کا کوئی جاندار تصور بھی نہیں کر سکتا

سنگین بیماری میں مبتلا اس نوجوان لڑکی نے اپنی زندگی بچانے کیلئے اہم ترین ...
سنگین بیماری میں مبتلا اس نوجوان لڑکی نے اپنی زندگی بچانے کیلئے اہم ترین آپریشن کروانے سے انکار کردیا،لیکن کیوں ؟وجہ ایسی جس کا کوئی جاندار تصور بھی نہیں کر سکتا

  



لندن (نیوز ڈیسک) جواں سال برطانوی لڑکی شانن پیٹرائیڈز نوعمری سے ہی پھیپھڑوں کی خطرناک بیماری میں مبتلا ہیں اور طویل عرصے سے جگر اور دل کے ٹرانسپلانٹ کی منتظر تھیں لیکن جب ٹرانسپلانٹ کا موقع آیا تو انہوں نے صاف انکار کرکے سب کو حیرت میں ڈال دیا۔

شانن بچپن سے ہی سسٹک فائبروسس نامی بیماری کا شکار ہیں جس کی وجہ سے ان کے پھیپھڑوں میں مائع بھرجاتا ہے اور گزشتہ چند سال کے دوران ان کی صحت انتہائی خراب ہوچکی ہے۔ گزشتہ سال ستمبر میں انہیں جگر اور دل کے ٹرانسپلانٹ کے منتظر مریضوں کی لسٹ میں شامل کیا گیا اور حال ہی میں جب انہیں یہ خوشخبری سنائی گئی کہ ان کے ٹرانسپلانٹ کا موقع آگیا ہے تو انہوں نے ایک عجیب و غریب فیصلہ کرتے ہوئے بتایا کہ وہ ٹرانسپلانٹ کروانے کی بجائے اپنی کچھ عزیز ترین خواہشات پوری کرنا چاہیں گی۔ ڈاکٹروں نے بتایا تھا کہ ٹرانسپلانٹ کا عمل خطرے سے خالی نہ ہوگا اور اس کے دوران ان کی موت ہوسکتی ہے جبکہ ٹرانسپلانٹ نہ کروانے کی صورت میں وہ مزید کچھ عرصہ زندہ رہنے کے بعد دنیا سے رخصت ہوجائیں گی۔ شانن نے ٹرانسپلانٹ کے ذریعے اپنی زندگی بڑھانے کی بجائے باقی ماندہ مختصر زندگی جینے کا فیصلہ کیا اور اس مختصر عرصے کے دوران اپنی خواہشات کی فہرست مکمل کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔

انہوں نے اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹ پر اپنی خواہشات کی ایک فہرست بھی جاری کی ہے جس میں ایک بڑی پارٹی کا انعقاد کرنا، سفاری پارک میں جاکر شیر کو کھانا کھلانا، گرم ہوا کے غبارے میں اڑنا، سی ایف ٹرسٹ کے لئے چندہ جمع کرنا، انٹرنیٹ پر شہرت حاصل کرنا، ڈزنی لینڈ کی سیر کرنا، ہیری پوٹر سٹوڈیو جانا، مادام تساﺅ میوزیم جانا، ہیلی کاپٹر پر اڑان بھرنا، اپنی سالگرہ منانا اور ایک پینگوئن سے ملاقات کرنا شامل ہیں۔ وہ اب تک ان میں سے کچھ خواہشات پوری کرچکی ہیں جبکہ ان کے عجیب و غریب فیصلے کے بارے میں خبر عام ہونے کے بعد انٹرنیٹ پر مشہور ہونے کی خواہش بھی پوری ہوچکی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...