سعودی عرب کے قوانین کی سرعام دھجیاں اڑانے والی ’باغی‘ لڑکی کو گرفتار کرلیا گیا، یہ کون ہے اور ایسا کیا کام کردیا کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا؟ جواب جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

سعودی عرب کے قوانین کی سرعام دھجیاں اڑانے والی ’باغی‘ لڑکی کو گرفتار کرلیا ...
سعودی عرب کے قوانین کی سرعام دھجیاں اڑانے والی ’باغی‘ لڑکی کو گرفتار کرلیا گیا، یہ کون ہے اور ایسا کیا کام کردیا کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا؟ جواب جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں خواتین کے لیے ڈرائیونگ شجرممنوعہ ہے اور خلاف ورزی پر قید و بند کی سزائیں منتظر ہوتی ہیں۔ چند ماہ قبل خواتین کے حقوق کے لیے کام کرنے والی فلاحی کارکن 27سالہ لوجین الحضلول نے اس پابندی کو کھلے عام چیلنج کیا جس پر اسے اڑھائی مہینے تک قید رکھا گیا۔ اب لوجین کو ایک بار پھر حراست میں لے لیا گیا ہے لیکن میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق اس بار سعودی حکام نے اس گرفتاری کی تفصیلات نہیں بتائیں۔ بتایا گیا ہے کہ لوجین کواس بار 4جون کو شاہ فہد انٹرنیشنل ایئرپورٹ دمام سے گرفتار کیا گیا ہے۔

’ہم عورتوں کو یہ کام کرنے کی اجازت دینے والے ہیں‘ سعودی وزیر نے زوردار اعلان کردیا، سعودی مردوں کے ہوش اڑادئیے

رپورٹ کے مطابق ایمنسٹی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ ”لوجین کو وکیل یا اپنے خاندان سے بھی رابطہ کرنے کی اجازت نہیں دی جا رہی۔اسے مسلسل ہراساں کیا جانامضحکہ خیز اور غیرمنصفانہ ہے۔ اسے فوری طور پر رہا کیا جائے۔“ ایمنسٹی انٹرنیشنل کی عہدیدار سما حدید کا کہنا تھا کہ ”لوجین کو اس کے پرامن کام کی وجہ سے ایک بار پھر نشانہ بنایا جا رہا ہے کیونکہ وہ خواتین کے حقوق کے لیے آواز اٹھاتی ہے، جو کہ سعودی حکومت کے لیے قابل قبول نہیں۔“برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق توقع کی جا رہی ہے کہ لوجین کو دمام سے ریاض منتقل کیا جا رہا ہے جہاں پراسیکیوٹرز اس سے تفتیش کریں گے۔

مزید :

عرب دنیا -