فلسطینی بچوں کا مطالبہ رنگ لے آیا ارجنٹائن اور اسرائیل کا فٹبال میچ منسوخ

فلسطینی بچوں کا مطالبہ رنگ لے آیا ارجنٹائن اور اسرائیل کا فٹبال میچ منسوخ

  

 بیونس آئرس(نیٹ نیوز)ارجنٹائن نے اسرائیل کے خلاف ورلڈ کپ 2018کے لیے مقبوضہ بیت المقدس میں 9جون کو شیڈول اپنا آخری وارم اپ میچ منسوخ کردیا۔برطانوی اخبار دی گارجین کی رپورٹ کے مطابق ارجنٹائن کے اسٹرایئکر گونزالو ہنگوئین نے کہا ہے کہ ہم نے ٹھیک فیصلہ کرلیا، ساتھ ہی تصدیق کی کہ ارجنٹائن اور اسرائیل کے درمیان ہونے والا میچ منسوخ کیا جاچکا ہے۔مذکورہ اعلان کے بعد فلسطینی فٹ بال ایسوسی ایشن (پی ایف اے)کی جانب سے ایک اعلامیہ جاری کیا گیا جس میں انہوں نے ارجنٹائن کے کپتان اور اسٹار فٹبالر لیونل میسی اور ان کی ٹیم کا میچ منسوخ کرنے پر شکریہ ادا کیا۔پی ایف اے کے چیئرمین کی جانب سے جاری کردہ اس اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پی ایف اے ارجنٹائن کے کپتان اور کھلاڑیوں کا کھیلوں کے برخلاف مہم کا حصہ بننے سے انکار پر بے حد مشکور ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جبرائیل رجب کا کہنا تھا کہ آج وارم اپ میچ کی منسوخی سے کھیل، اخلاقیات اور اقدار کی فتح ہوئی جبکہ اسرائیل کو ریڈ کارڈ دکھا دیا گیا۔دوسری جانب اسرائیل نے دعوی کیا ہے کہ مذکورہ مقابلہ میچ کے دوران کسی ناخوشگوار واقعے کی دھمکیوں کے پیشِ نظر منسوخ کیا گیا ہے۔خیال رہے کہ چند روز قبل یہ اطلاعات سامنے آئیں تھیں کہ فٹبال ورلڈ کپ سے قبل ارجنٹائن اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے دوستانہ میچ پر فلسطینی بچوں نے احتجاج کرتے ہوئے عالمی شہرت یافتہ فٹبالر لیونل میسی سے یہ میچ نہ کھیلنے کی درخواست کی تھی۔دونوں ملکوں کے درمیان جاری تاریخی تنازع اور حال ہی میں فلسطینی عوام پر کی گئی اسرائیلی فوج کے ظلم و ستم کے بعد 70 فلسطینی بچوں پر مشتمل گروپ نے ارجنٹائن کے فٹ بالر لیونل میسی کو خط لکھ کر درخواست کی تھی کہ وہ اسرائیل کے خلاف دوستانہ میچ میں شرکت نہ کریں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -