سمندروں کا عالمی دن کل منایا جائیگا

سمندروں کا عالمی دن کل منایا جائیگا

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر) دنیا بھر میں سمندروں کا عالمی دن کل منایا جائیگاجس کا مقصد انسانی زندگی میں پانی کی اہمیت، آبی جانوروں کا (بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

تحفظ اور سمندری آلودگی کم کرنا ہے،اس دن کی مناسبت سے دنیا بھر میں کانفرنسیں، سیمینارز اور تقاریب منعقد کی جائیں گی جس کی ابتدا2008ء میں ہوئی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ سمندر ہماری زمین کا دل اور پھیپھڑے ہیں کیونکہ یہ زمین پر استعمال ہونیوالا چالیس فیصد تازہ پانی پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ 75فیصد آکسیجن بھی پیدا کرتے ہیں جس سے ہم سانس لیتے ہیں، اس وقت سمندری پانی اور اس میں موجود نباتات اور حیوانات کو مختلف ملکوں کے ساحلی شہروں سے کیمیاوی اور دوسرے مضر اجزاء کا سامنا ہے جبکہ سمندروں میں ہونے والے حادثے بھی سمندری حیات کیلئے سنگین خطرہ خیال کیے جاتے ہیں،اقوام متحدہ کی اس رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ سمندر کو محفوظ بنانے کے بعد اسے توانائی کا متبادل ماخذ بھی بنایا جا سکتا ہے جبکہ سمندری علوم کے ماہرین زمین پر پھیلے وسیع و عریض سمند روں کو معدنی ذخائر کا بھی ایک بے بہا خزانہ سمجھتے ہیں، ماہرین کا کہنا ہے کہ سمندر کی شکل میں دینا کے تین حصوں پر مشتمل پانی کا ذخیرہ جو حیات انسانی کیلئے ضروری ہے، ایک خاموش تباہی کی سمت بڑھ رہا ہے اوراس کیلئے فوری اقدامات کی ضرورت ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -