پی پی پارا چنار کا پی پی کے صدر کو ٹکٹ نہ دینے پر برہمی کا اظہار

پی پی پارا چنار کا پی پی کے صدر کو ٹکٹ نہ دینے پر برہمی کا اظہار

  

پاراچنار(نمائندہ پاکستان) پیپلز پارٹی پاراچنار کے رہنماؤں نے پی پی پی کے صدر کو ٹکٹ نہ دینے پر سخت برہمی کا اظہار کیا ہے اور پارٹی کے اعلیٰ حکام سے کارکنوں کو نظر انداز کرنے کی پالیسی ترک کرنے کا مطالبہ کیا ہے پاراچنار میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پی پی پی کے صدر حاجی جمیل طوری، سیکٹری جنرل علی اکبر، سیکرٹری جنرل آل فاٹا سید افتخار شیرازی، صدر پیپلز یوتھ زاہد حسین،صدر پی ایس ایف عرفان حیدر اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ کرم ایجنسی حلقہ این اے 46 سے پی پی پی کے صدر کو ٹکٹ سے محروم رکھنے اور غیر کارکن شخص کو ٹکٹ دینے کی سازش کی جارہی ہے اور پارٹی کے بعض زمہ دار افراد پارٹی کی اعلی قیادت کو غلط مشورے دیکر پارٹی کو نقصان پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں رہنماؤں نے اعلان کیا کہ پارٹی کارکنوں کے ساتھ ناانصافی کی گئی تو ہر فورم پر احتجاج کیا جائے گا اور احتجاجی دھرنوں کا سلسلہ شروع کیا جائے گا رہنماؤں کا کہنا تھا کہ کارکنوں نے پوری عمر پارٹی میں گزار کر قربانیاں دی ہیں جبکہ پارٹی موجود بعض اپنے ذاتی مفادات کی خاطر پیراشوٹ کے ذریعے پارٹی میں اترنے والوں کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے جو کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی رہنماؤں نے آصف زرداری اور بلاول بھٹو سے مطالبہ کیا کہ پارٹی صدر کو ہی این اے 46 کا ٹکٹ دیا جائے اور انہیں احتجاج پر مجبور نہ کیا جائے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ انہیں باخبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پارٹی ٹکٹ کارکن کی بجائے کسی اور امیدوار کو دی جارہی ہے جس سے پارٹی کارکنوں میں شدید مایوسی پھیل گئی ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -