A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined offset: 0

Filename: frontend_ver3/Sanitization.php

Line Number: 1246

Error

A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined offset: 2

Filename: frontend_ver3/Sanitization.php

Line Number: 1246

بڑے آپریشن کے ذریعے ماں بننے والی خاتون کو کنوارہ ظاہر کرکے دوبارہ شادی  لیکن پھر ایسا کام ہوگیا کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

بڑے آپریشن کے ذریعے ماں بننے والی خاتون کو کنوارہ ظاہر کرکے دوبارہ شادی  لیکن پھر ایسا کام ہوگیا کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

Jun 07, 2018 | 12:48:PM

وہاڑی (ویب ڈیسک) بڑے آپریشن کے ذریعے بچے کی ماں بننے والی شادی شدہ لڑکی کو اغواء کر کے کنواری ظاہر کرکے نکاح پر نکاح کرنے والے ملزموں پر مقامی پولیس مہربان ، لڑکی کو برآمد اور مرکزی ملزم کو گرفتار کئے بغیر ساتھی ملزمان کی ضمانت منظور کروانے کیلئے پولیس نے معمولی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا ،  مغویہ کے ورثاء کے احتجاج پر قائمقام ڈی پی او سیف اللہ خاں خٹک نے ایس ایچ او درنیوال محمد ادریس رانا کو حکم دیدیا کہ وہ تفتیشی مختار احمد ایس آئی اور مثل کو لیکر پیش ہوں اور مغویہ کی برآمدگی،ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بنائیں اور انصاف اور قانون کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے دفعات درست کریں ، درخواست گزار بھٹہ اکرام کچی آبادی کی رہائشی عرفانہ بی بی زوجہ محمد مختار نے موقف اختیار کیا کہ اسکی بیٹی (ا) بی بی زوجہ محمد رمضان اغواء ہوگئی ہے ، پولیس نے مقدمہ درج نہ کیا ۔

رونامہ خبریں کا کہنا ہے کہ پولیس تھانہ درکیوال وہاڑی نے مقدمہ نمبر 217/18مورخہ 10/05/18بجرم 496/Aدرج کر لیا ، میری بیٹی کی 3/4سال قبل شادی محمد رمضان سے ہوئی جو میجر آپریشن کے ذریعے بچے کی ماں بھی بنی ، بچہ بعد ازاں فوت ہوگیا ، میری بیٹی (ا) بی بی کو لڑکیاں اغواء کر نے والے بین الاضلاعی گروہ کے رکن نے اغواء کر کے اسے رمشاء دختر محمد اقبال ظاہر کرکے ضلع لودھراں میں ایک جعلی اور فرضی نکاح مورخہ 8/5/18کر لیا اور رانا عدنان ولد عبدالستار راجپوت سکنہ پرانا کارخانہ خانیوال سے نکاح ظاہر کیا اور گواہان عبدالستار اور اسکے بھائی نعمان کو ظاہر کیا اور نکاح نامہ میں دلہن کو کنواری ظاہری کیا گیا جبکہ (ا) بی بی کے والد کا نام بھی محمد اقبال لکھا گیا ، حالانکہ محمد اقبال اسکا سسر ہے اور شوہر محمد رمضان کی موجودگی میں شادی کرنا دفعہ 494ت پ جبکہ نکاح نامہ کی جعلسازی کی نسبت دفعات 420/468، 471پ عائد کر کے ملزمان کو گرفتار اور مغویہ کو برآمد کر کے اسکے بیانات قلمبند کئے جائیں ، اس بابت ملزمان نے نکاح پر نکاح کر نے کے بعد ہائیکورٹ سے تحفظ طلب کیا جہاں پر مغویہ کا نام (ا) تسلیم بھی کیا گیا اور مغویہ کی تصویر بھی لگائی گئی ، ڈی پی او سیف اللہ خٹک نے ایس ایچ او کو کارروائی کا حکم دیدیا۔

مزیدخبریں