’’اپنا زیرجامہ اتارو کیونکہ۔۔۔‘‘ امتحان سے پہلے سکیورٹی اہلکار نے نوجوان لڑکی کو ایسا کام کرنے پر مجبور کر دیا کہ انٹرنیٹ پر طوفان برپا ہو گیا

’’اپنا زیرجامہ اتارو کیونکہ۔۔۔‘‘ امتحان سے پہلے سکیورٹی اہلکار نے نوجوان ...
’’اپنا زیرجامہ اتارو کیونکہ۔۔۔‘‘ امتحان سے پہلے سکیورٹی اہلکار نے نوجوان لڑکی کو ایسا کام کرنے پر مجبور کر دیا کہ انٹرنیٹ پر طوفان برپا ہو گیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر سکیورٹی انتظامات تو دنیا بھر کے تعلیمی اداروں میں کیے جا رہے ہیں لیکن سکیورٹی کی آڑ میں گزشتہ دنوں روس میں ایک سکول کے سکیورٹی گارڈز نے ایک نوجوان طالبہ کے ساتھ ایسی شرمناک حرکت کر ڈالی کہ پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ میل آن لائن کے مطابق روس کے شہر نیزنیکامسک میں 17سالہ طالبہ امتحان کے لیے اپنے سکول گئی جہاں مرکزی دروازے پر دو سکیورٹی گارڈز میٹل ڈی ٹیکٹر سے طالبات کی تلاشی لے رہے تھے۔ اس طالبہ کی انگیا میں دھاتی تار تھے جس کی وجہ سے ڈی ٹیکٹر کا الارم بج اٹھا۔ اس پر سکیورٹی گارڈز نے اسے اپنے سامنے انگیا اتارنے پر مجبور کر دیا۔

اس طالبہ کی بہن نے سوشل میڈیا پر یہ واقعہ بیان کیا جس نے صارفین کو آگ بگولہ کر دیا۔ لڑکی نے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ ’’اس بار سکول نمبر 10میں صرف لڑکیوں کے موبائل فونز ہی نہیں لیے گئے بلکہ ان کے زیرجامے بھی مردوں کے سامنے اتروائے گئے۔ گارڈز نے میری بہن کو روک لیا اور اسے اپنے سامنے انگیا اتارنے پر مجبور کر دیا۔ میری بہن نے شیفون کی ایسی شرٹ پہن رکھی تھی جس سے اس کاپور ا جسم نظر آرہا تھا۔ انگیا اترنے کے بعد اس کی چھاتی بھی صاف نظر آ رہی تھی اور گارڈ ٹکٹکی باندھ کر اس کی چھاتی کو دیکھ رہے تھے۔اس سب کچھ کے بعد اس نے امتحان میں کیا لکھا ہو گا؟‘‘ دوسری طرف نیزنیکامسک کے شعبہ تعلیم کی نائب سربراہ آئزیریاک ریمازامووا کا کہنا ہے کہ ’’سکول نمبر 10میں اس طرح کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ ہم نے پہلے ہی طلبہ اور ان کے والدین کو بتا رکھا ہے کہ وہ ایسے لباس کے ساتھ اپنے بچوں کو سکول مت بھیجیں جس میں دھاتی تار کا استعمال کیا گیا ہو۔کچھ طلبہ ہماری ہدایات پر کان ہی نہیں دھرتے۔‘‘

مزید :

ڈیلی بائیٹس -