مدارس اہلسنت کا 14جون کے بعد تعلیمی سرگرمیاں شروع کرنے کا اعلان

مدارس اہلسنت کا 14جون کے بعد تعلیمی سرگرمیاں شروع کرنے کا اعلان

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی)سنی تنظیمات کے مشترکہ پلیٹ فارم تحفظ ناموس رسالت محاذ کے زیراہتمام دارالعلوم جامعہ نعیمیہ گڑھی شاہو میں ”ناظمین مدارس اہل سنت کنونشن“کے مشترکہ اعلامیہ میں کہاگیا ہے کہ مدارس اہل سنت میں نئے تعلیمی سال کے آغاز پر داخلوں کاآغاز ہوچکاہے اسے شوال المکرم کے دوسرے عشرے کے اختتام تک مکمل کیا جائے گا۔20شوال المکرم بمطابق 14جون 2020ء کے بعدمدارس دینیہ میں پہلے کی طرح تعلیمی سرگرمیوں کاآغاز کیاجائے گا۔حکومت وقت اورملکی اداروں کے ساتھ مساجد کے لئے طے شدہ ایس اوپیز مدارس میں بھی فالو کئے جائیں گے،11جون 2020ء بروزجمعرات صبح9بجے ڈاکٹرسرفراز نعیمی شہیدؒ کے 11ویں یوم شہادت کے موقع پرجامعہ نعیمیہ میں شہید پاکستان سیمینار کاانعقاد کیا جائے گا۔سیمینار کی صدارت شیخ الحدیث صاحبزادہ رضائے مصطفی نقشبندی نے کی۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ناظم اعلیٰ دارالعلوم جامعہ نعیمیہ وممبراسلامی نظریاتی کونسل علامہ ڈاکٹرراغب حسین نعیمی نے کہاکہ مدارس دیینہ میں روایتی نظام تعلیم کے ساتھ ساتھ جدیدنظام تعلیم کو اپنایاجائے تاکہ طلبہ کے تعلیمی سال کو ضائع ہونے سے بچایا سکے۔شیخ الحدیث صاحبزاہ رضائے مصطفی نقشبندی،مولانا محمدعلی نقشبندی،شیخ الحدیث مفتی گل احمدعتیقی،مولاناپیر محمدعلی نقشبندی،علامہ محمدقاسم علوی، پیر معاذ المصطفیٰ،علامہ محمدراحت عطاری، صدر نعیمین ایسوسی ایشن پاکستان ڈاکٹرمفتی محمد حسیب قادری،مفتی خلیل احمد یوسفی،علامہ طاہر شہزاد سیالوی،قاری مختار احمد صدیقی و دیگر بھی موجود تھے۔

،علامہ شریف الدین قذافی، علامہ محمدعبداللہ ثاقب،علامہ نعیم جاوید نوری، مفتی محمدانوار، مفتی انتخاب احمد،مولانا حبیب احمد سعیدی،مولانا شفقت یوسفی،مولانا اعظم علی نعیمی، پیر بشیرجان سیفی،حاجی عبداالخالق،مولاناعبدالغفار گجر،مولانا حسن رضادیگر تنظیمات اورمدارس کے نمائندگان شریک ہوئے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -