پنجاب بھر میں پٹرول کی قلت برقرار،حکومت کا مارکیٹنگ کمپنیوں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

پنجاب بھر میں پٹرول کی قلت برقرار،حکومت کا مارکیٹنگ کمپنیوں کیخلاف ...

  

لاہور(این این آئی)صوبائی دارالحکومت لاہورسمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں پٹرول کی قلت بدستوربرقرارہے جبکہ وزیر پیٹرولیم عمرایوب خان نے کہاہے کہ حکومت نے ان تمام آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اورڈیلروں کیخلاف سخت کارروائی کافیصلہ کیاہے جو پٹرول اورڈیزل کی مصنوعی قلت پیدا کرتے ہوئے منافع کمانے میں ملوث ہیں۔تفصیلات کے مطابق لاہورسمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں پیٹرولیم کی قلت دورنہیں ہو سکی جس کی وجہ سے عوا م کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ گزشتہ روز بھی مختلف علاقوں میں پمپس بند رہے اورجہاں پیٹرول دستیاب ہے وہاں پر شہریوں کی قطاریں لگی رہیں۔ لاہور میں پرائیویٹ کمپنیوں کی ملکیت 220پٹرول پمپس میں سے بیشتر پر پٹرول نایاب ہے۔ تاہم سرکاری آئل کمپنی کے پمپس پر پٹرول دستیاب ہے۔فیصل آباد کے پمپ مالکان نے بیشتر پٹرول پمپس کو سپلائی نہ ملنے کا بہانا بنا کر مکمل طور پر بند کررکھا۔دوسری جانب وزیرپٹرولیم عمرایوب خان نے کہاہے کہ حکومت نے ان تمام آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اورڈیلروں کیخلاف سخت کارروائی کافیصلہ کیاہے جو پٹرول اورڈیزل کی مصنوعی قلت پیدا کرتے ہوئے منافع کمانے میں ملوث ہیں۔ایک ٹوئٹ میں انہوں نے کہاکہ ذخیرہ اندوزوں اورمنافع خوروں کی فہرست تیارکی جائے گی اور ا ن کے لائسنس معطل کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں بے نقاب بھی کیاجائے گا۔وفاقی وزیرعمرایوب نے کہا ہے کہ عوام پریشان نہ ہوں کیونکہ ملک میں پٹرولیم مصنوعات کی کوئی قلت نہیں۔

پٹرول بحران

مزید :

صفحہ اول -