خیبرپختونخوا میں اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس بے وقت کی راگنی:اجمل وزیر

  خیبرپختونخوا میں اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس بے وقت کی راگنی:اجمل وزیر

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)مشیر اطلاعات خیبر پختونخوا اجمل خان وزیر نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا میں اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس بے وقت کی راگنی ہے۔اپوزیشن کو مسائل حل ہونے کے بعد مسائل کی نشاندہی یاد آجاتی ہے، وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق وزیراعلیٰ محمود خان کی قیادت میں صوبے میں کورونا کے خلاف موثر اقدامات کئے جارہے ہیں، اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس پر ردعمل دیتے ہوئے مشیر اطلاعات اجمل وزیر نے کہا کہ موجودہ حالات ہم سے سیاست کا نہیں قومی یک جہتی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن سے متاثرہ خاندانوں کے لیے حکومت نے احساس ایمرجنسی کیش پروگرام شروع کیا ہے جو ملک کی تاریخ کا شفاف ترین منصوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی تاریخ میں پہلی مرتبہ قومی رابطہ کمیٹی میں تمام صوبوں کے وزرائے اعلیٰ سمیت وزیر اعظم آزاد کشمیر سے مشاورت کی جاتی ہے جسکا کریڈٹ وزیر اعظم عمران خان کو جا تا ہے۔ اجمل وزیر نے تارکین وطن کی ملک واپسی کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں کہا کہ حکومت اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل کے لیے سنجیدہ اقدامات اٹھا رہی ہے اپوزیشن کو اوورسیز پاکستانی تب یاد آئے ہیں جب حکومت ان کے لیے اقدامات اٹھا چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے دل کے قریب ہیں اور وزیراعلیٰ کی خصوصی درخواست پر باچا خان انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے تارکین وطن لانے کے لئے فلائٹ آپریشن شروع ہوچکا ہے جبکہ بیرونی ممالک میں مقیم پاکستانیوں کی میتیں بھی لائی جارہی ہیں۔ مختلف خلیجی ممالک سے اپریل سے مئی تک 23 خصوصی پروازوں کے ذریعے چار ہزار سے زائد تارکین وطن ملک پہنچے ہیں اور مزید اوورسیز کی آمد کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ لاک ڈاؤن سے پہلے صرف دو مہینوں میں 81000 سے زائد مسافر باچا خان ائیرپورٹ کے ذریعے ملک آئے ہیں۔تمام مسافروں کو مکمل سکریننگ کے بعد گھروں کو منتقل کیا جاتا ہے جبکہ کورونا سے متاثرہ مریضوں کو قرنطینہ سنٹرز میں قیام دیا جاتا ہے۔افغانستان سے آنے والے پاکستانیوں کے لئے بھی ضلع خیبر میں قرنطینہ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ ضم اضلاع کے بارے میں اجمل وزیر نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کی ترقی کی جتنی فکر وزیراعظم عمران خان کو ہے اتنی کسی اور کو نہیں۔ مشیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ محمود خان کی قیادت میں ضم شدہ اضلاع کی تیز تر ترقی کا عمل جاری ہے۔ آنے والے بجٹ میں ضم اضلاع کی ترقی کے لیے خاطر خواہ رقم مختص کریں گے۔ اجمل وزیر نے ڈاکٹرز و دیگر طبی عملے کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ ہمارے ڈاکٹرز اور طبی عملہ کم وسائل کے باوجود کورونا کے خلاف برسر پیکار ہیں۔ ڈاکٹرز اور طبی عملہ ہمارے ہیروز ہیں مشکل کی اس گھڑی میں انکی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔ صوبے میں لاک ڈاؤن میں نرمی کے حوالے سے اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ تمام کاروباروں کو ایس او پیز کے تحت کھولنے کی اجازت دی ہے، عملدرآمد نہ ہونے کی صورت میں ضلعی انتظامیہ ایکشن لے رہی ہے۔ انہوں نے تاجر برادری سے اپیل کی ہے کہ احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں تاکہ عوام کو کورونا وائرس سے تحفظ فراہم کیا جاسکے۔ اجمل وزیر نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو ہمیشہ غریب اور مزدور طبقے کی فکر رہتی ہے،لاک ڈاؤن میں نرمی بھی غریب طبقے کی مشکلات کو مدنظر رکھ کر کی گئی ہے حکومت کو دو چیلنجز کا سامنا ہے ایک طرف کورونا سے لڑنا دوسری جانب معیشت کا پہیہ چلانا۔

مزید :

صفحہ اول -