پیٹرول بدستور ناپید،پمپوں پر لمبی قطاریں،شدید مشکلات کا سامنا

پیٹرول بدستور ناپید،پمپوں پر لمبی قطاریں،شدید مشکلات کا سامنا

  

ہنگو(بیورورپورٹ)ہنگومیں پیٹرول بدستور ناپید،پمپوں پر لمبی قطاریں،عوام کو شدید مشکلات کا سامنا، بعض دوکانوں میں فی لیٹر 150 روپے تک فروخت ہونے کا انکشاف۔عوام در بدر ٹھوکریں کھانے مجبور، کوئی پرسان حل نہیں۔حکومت کی جانب سے پیٹرول سستااعلان کے بعد پیٹرول پمپ مافیا نے پیٹرول کی قلت پیدا کی۔ شہری حلقوں کا موقف جبکہ ڈی سی ارشد منصور کے مطابق کہ پمپوں میں پٹرول عدم موجود گی مین ڈپو سے سپلائی بند ش ہے جسکی باعث قلت پیدا ہوئی ہے۔ڈپٹی کمشنر ہنگو کے مطابق پٹرول کی قلت ختم کرنے کے لئے اعلیٰ سطحی پر کام جاری ہے بہت جلد اس قلت پر قابو پالیا جائے گا۔دوسری جانب ہنگو کے شہری خان امیر بگٹی،واصل خان،صاحب گل اور دیگر نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی طرف سے جب بھی کسی چیز میں ریلیف ملنے کا اعلان کیا جائے تو عوام کو ریلیف کی بجائے تذلیل کی جاتی ہے اور پاکستان کی ہر جگہ انتظامیہ عوام کو بروقت ریلیف دینے میں ناکام ہوجاتی ہیں اوران طاقتور مافیاں کے خلاف قانون صرف کتاب تک محدود ہوکررہ جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ جب کمزور کے خلاف کاروائی ہو تو پاکستان کے تمام دفعات فوری طور پر لاگو ہوجاتے ہیں۔ شہریوں نے حکومت اور انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ خود ساختہ پیٹرول کی قلت پیدا کرنے والے پیٹرول پمپ کے خلاف کرتے ہوئے مالکان کے لائسنس منسوخ کئے جائیں۔

مزید :

صفحہ اول -