دو جعلی ڈاکٹرز پاکستانی مریض کا آپریشن کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

دو جعلی ڈاکٹرز پاکستانی مریض کا آپریشن کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار
دو جعلی ڈاکٹرز پاکستانی مریض کا آپریشن کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

  

بہاولنگر (ویب ڈیسک) بہاول نگر کی تحصیل چشتیاں میں دو جعلی آرتھوپیڈک سرجن نجی ہسپتال میں مریض کی ٹانگ کا آپریشن کرتے ہوئے گرفتار ہو گئے۔

تھانا سٹی اے ڈویژن چشتیاں پولیس کے مطابق انہیں 15 کے ذریعے اطلاع ملی کہ بہاول نگر روڈ پر واقع ایک نجی آرتھوپیڈک ہسپتال میں دو جعلی سرجن کئی گھنٹوں سے افضال نامی مریض کی ٹانگ سے راڈ نکالنے کے لیے آپریشن کر رہے ہیں۔اطلاع ملنے پر پولیس نے فوری طور ہسپتال جا کر دونوں جعلی سرجنز وسیم اور وقاص کو حراست میں لے لیا اور مریض کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کر دیا ہے۔

جیو نیوز کے مطابق مقامی نجی ہسپتال کے ڈاکٹر نے بتایا کہ میں نے ملزمان کے خلاف پولیس کو درخواست دی ہے کہ یہ میرے ہسپتال میں آپریشن اسسٹنٹ اور اٹنیڈنٹ ہیں اور میرے آرتھوپیڈک ہسپتال میں آپریشن کے لیے مریضوں کو کم پیسوں میں آپریشن کرنے کا لالچ دے کر ایک اور نجی ہسپتال میں لے جا کر خود سرجن بن کر آپریشن کرتے ہیں اور انھوں نے کئی مریضوں کو غلط آپریشن کر کے معذور بنا دیا ہے۔

متاثرہ مریض افضال کا کہنا ہے کہ حکومت ایسے جعلی سرجنوں اور ہسپتالوں کے خلاف کارروائی کرے اور مجھے بھی انصاف فراہم کیا جائے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -بہاول نگر -