شوگر انکوائری اس بات کی نہیں تھی کہ ۔۔۔احسن اقبال نے حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مشکل میں ڈال دیا

شوگر انکوائری اس بات کی نہیں تھی کہ ۔۔۔احسن اقبال نے حکومت کو آڑے ہاتھوں ...
شوگر انکوائری اس بات کی نہیں تھی کہ ۔۔۔احسن اقبال نے حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مشکل میں ڈال دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ شوگر انکوائری اس بات کی نہیں تھی کہ سبسڈی کس نے دی؟سبسڈی تو دنیا کا ہر ملک زراعت کے شعبے میں دیتا ہے، یہ انکوائری تو اس لیے تھی کہ شوگر کی قیمت 52روپے سے 90 روپے تک کیسے پہنچی؟حکومت اپنی چوری کوچھپانےکیلئےمسئلےکوکنفیوز کررہی ہے،پی ٹی آئی دورمیں چینی قیمت بڑھی، بتایاجائے کس کس نے فائدہ اٹھایا؟۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ جب ملک میں چینی کی کمی تھی پی ٹی آئی حکومت نےاس کی اجازت دی،حکومت اپنی چوری کوچھپانےکیلئےمسئلےکوکنفیوز کررہی ہے،چینی بحران میں جس کےنام آئےان کانام ای سی ایل میں کیوں نہیں ڈالاگیا؟مسلم لیگ ن کےدورمیں چینی کی قیمت مستحکم تھی ،پی ٹی آئی دورمیں چینی قیمت بڑھی بتایاجائے کس کس نے فائدہ اٹھایا؟ چینی کی قیمتیں بڑھنےکاذمے دارکون تھا یہ نہیں بتایا گیا،حکومت پہلےان چوروں کوپکڑےجنہوں نے چینی منہگی کی۔احسن اقبال نے کہا کہ اخباری اطلاعات کے مطابق ترقیاتی بجٹ کو 1400 ارب پہ لایا جارہا ہے یعنی جو دو سال پہلے ہمارے دور کا ترقیاتی بجٹ تھا،اس سے 600ارب روپے کی کٹوتی ہے.

اُنہوں نےکہاکہ اس وقت ملک میں کورونا کی وبابےقابو ہوچکی ہےاورپاکستان میں روزانہ اموات کی شرح تقریباً100کےقریب پہنچ چکی ہے،اس وقت اٹلی سے زیادہ کیسز روزانہ رپورٹ ہورہے ہیں.احسن اقبال نےکہاکہ لوگوں کو سمجھ آچکا ہےکہ پاکستان میں سب سے بڑی کرپٹ پی ٹی آئی کی حکومت ہے،وہ وزیر جس نے ادویات کاسکینڈل کیا، اسے آپ نے پارٹی کا سیکرٹری جنرل لگا دیا.انہوں نے کہا کہ نیب جتناآزادہےآج پاکستان کےہرشہری کوپتاہے،نیب کی آزادی کاسارازوراپوزیشن پرچلتاہے،عمران خان نیب کوہدایات دیتےہیں تونیب اپوزیشن کیخلاف سرگرم ہوجاتاہے۔

مزید :

قومی -