گرمی میں اضافہ، غیر معیاری شربت کی فروخت عروج پر ا،نتظامیہ خاموش

  گرمی میں اضافہ، غیر معیاری شربت کی فروخت عروج پر ا،نتظامیہ خاموش

  

 لاہور(افضل افتخار) صوبائی دارالحکومت  میں گرمی کی شدت بڑھنے کے ساتھ ہی جگہ جگہ شربت والو ں نے ڈیرے سجا لئے، بڑی شاہراہ ہو یا پھر گلی محلہ ہر جگہ شربت والے نظر آتے ہیں، اس حوالے سے کئے گئے سروے میں دیکھا گیا کہ زیادہ تر لوگ ناقص اور ملاوٹ شدھ شربت فروخت کرنے میں مصروف ہیں جس سے لوگوں میں مختلف بیماریاں خاص طور پر ہیپاٹائٹس اور جگر  و معدہ کی بیماری پھیلنے کا خدشہ ہے۔ ایک طرف تو لاہور فوڈ اتھارتی جگہ جگہ چھاپے مار کر اشیاء کا معیار چیک کررہی ہے دوسری جانب ان کی ہی ناک کے نیچے لوگ بڑی تعداد میں ناقص شربت  فروخت کر رہے ہیں۔شربت کی ان یڑھیوں پر صفائی کا بھی کوئی خیال نہیں رکھا جاتا، شہریوں کوگندے گلاسوں میں مکھیوں اور مٹی سے بھرا شربت دیدہ دلیری کے ساتھ پلایا جاتا ہے۔ اس حوالے سے شہری ندیم، خاور، عادل، زبیر، اسد، عمیر،علی خان، امین  شاکر، شہزاد، فرحت، اسد، عامر، آصف، عمیر اور زنیر نے کہا کہ گرمی میں شربت کسی نعمت سے کم نہیں یہ سستا بھی ہوتا ہے اور ہم پی کر گرمی کی شد ت کم کرتے ہیں مگر اس کا معیار چیک کرنا حکومت کا کام ہے جگہ جگہ شربت فروخت ہورہا ہے اس میں کوئی شک نہیں کہ یہ مضر صحت بھی ہوسکتا ہے مگر یہاں پر کون سی چیز اصلی ہے سب ناقص ہی تو ہے چاہے سستے داموں ملے یا مہنگے کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں انظامیہ کو چاہیے کے ایسے عناصر کے خلاف فوری اور سخت کارروائی کر۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -