رستم بونیر بائی پاس سرملنگ روڈ  سات برس میں تعمیر نہ ہوسکا

رستم بونیر بائی پاس سرملنگ روڈ  سات برس میں تعمیر نہ ہوسکا

  

رستم (تحصیل رپور ٹر)رستم بونیر بائی پاس سرملنگ روڈ سات برس میں تعمیر نہ ہوسکا، ٹھوٹ پھوٹ کا شکار ہونے والی روڈ سے ٹرانسپورٹرز اور مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ آئندہ اے ڈی پی میں روڈ کو شامل نہ ہونے کی صورت میں رستم مین چوک میں دھرنا دیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار تحصیل رستم برینگن کے رہائشی سماجی کارکن جمال اشرف خان اور محمد خالد عاصم اپنے درجنوں ساتھیوں سمیت رستم پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جمال اشرف خان کا کہنا تھا کہ شیرین خان چوک سے ملندری تک 12 کلومیٹر روڈ کے عدم تعمیر کی وجہ سے عوام کو آمدورفت اور خاص کر مریضوں کو لے جانے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے روڈ ٹھوٹ پھوٹ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگ گرد غبار کی وجہ سے نزلہ، زکام، سینے اور دیگر بیماریوں میں مبتلا ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے پچھلے بجٹ میں روڈ کی تعمیر کے لئے 20کروڑ روپے منظور کئے تھے لیکن معلوم نہیں کہ وہ رقم کہاں استعمال ہوچکی ہے، انہوں نے وزیراعلی محمود اور ایم پی اے طفیل انجم سے مطالبہ کیا کہ آنے والے بجٹ میں اس سکیم کو شامل کیا جائے بصورت دیگر رستم مین چوک میں تاریخی دھرنا دیا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -