مٹہ گوالیری کا چوکی انچارج بے تاج بادشاہ بن گیا

مٹہ گوالیری کا چوکی انچارج بے تاج بادشاہ بن گیا

  

مٹہ(نمائندہ پاکستان)مٹہ گوالیری چوکی انچارج  بے تاج بادشاہ بن گیا ہے انکوائری میں پولیس ڈیپارٹمنٹ تھانیدار کو بچانے کی کو شش کر رہے ہیں پولیس ڈیپارٹمنٹ ہمیں تین ایم پی او اور ٹریس کیس میں ڈالنے کی دھمکی دے رہے ہیں جرگہ کے باوجودڈی ایس پی مٹہ علاقے میں خانہ جنگی بنانے کی کوشش کر رہے ہیں وزیر اعلیٰ اپنے آبائی حلقے کے ایک چوکی انچارج کو سنبھال نہیں کر سکتا تو خود اپنے عہدے سے استفی دے پیر کے دن سے احتجاج کا آغاز کر ینگے ان خیالات کا اظہار سید اظہار اللہ اور محمد سیراج خان نے اپنے دیگر ساتھیوں سمیت مٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہو ئے کیا انہوں نے کہا کہ تحصیل مٹہ چپریا ل تھانہ گوالیری چوکی کے انچارج تھانیدار گوہر خان عوام کا محافظ نہیں بلکہ لوٹیرا بن گیا ہے دو فریقین کے درمیان گھاس چوری کرنے کا معاملہ تھا کہ جس پر ایک فریق پر پرچہ درج ہوا پرچہ ختم کرنے پر تھانیدار نے ان سے اسی ہزار روپے رشوت لیا اور پر چے کو پھاڑ دیا گیا جس کے تمام ثبوت ہمارے پاس موجود ہیں اس سلسلے میں ڈی پی او نے انکوائری مقرر کی انکوا ئری میں تھانیداد کو بچانے کی کوشش کیا جارہا ہے اور ہمیں اس میں پھنسانے کی کوشش کیا جارہا ہے اور ہمیں تین ایم پی او اور ٹریس کیسز میں دکھلنے کی دھمکی دی جاری ہے اس سلسلے میں تھانہ چپریال کے ایس ایچ او کے زیر نگرانی ایک جرگہ مقرر کیا گیا جس میں دیگر لوگوں کے علاوہ ڈی ایس پی مٹہ نے بھی شرکت کی وہاں ہمارے درمیان جرگہ کامیاب ہوا اس کے ہم نے پختون روایات کے مطابق تمام معاملہ رفع دفع کیا گذشتہ روز ہمیں تھانیدار کے طرف سے 5کروڑ روپے ہرجانے کاکورٹ نوٹس مل گیا ہے ڈی ایس پی مٹہ ایک طرف جرگے کرتے ہیں اور دوسری جانب کورٹ نوٹس اور ہمارے علاقے کے دیگر لوگوں کو ہمارے خلاف ورغلا رہے ہیں جس سے علاقے میں خانہ جنگی کو فروغ دے رہے ہیں اُنہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ کو بھی نشانہ بنایا کہ اگر وہ اپنے ہی حلقے میں ایک پولیس چوکی کے انچارج کا بندوبست نہیں کرسکتا تووہ اپنے اس اہم منسب کو چھوڑ کر گھر چلے جائے انہوں نے پیر کے دن سے گوالیری چوکی کے سامنے احتجاج شروع کرنے کا علان کیا اگر ہمارے مطالبات پر عمل نہیں ہوا توہم احتجاج کی لڑی مٹہ بازار اور وزیر اعلیٰ کے گھر کے سامنے تک پھیلائنگے 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -