تجربہ کار بزنس لیڈر شپ ایف پی سی سی آئی کی نمائندگی کرے، خواجہ صلاح الدین

تجربہ کار بزنس لیڈر شپ ایف پی سی سی آئی کی نمائندگی کرے، خواجہ صلاح الدین

  

  ملتان (سپیشل رپورٹر) ایوان تجارت و صنعت ملتان میں صدر ایوان خواجہ صلاح الدین کی زیرِ قیا دت فیڈر یشن آف پاکستان چیمبرز آ ف کامرس اینڈ انڈسٹری (بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

(ایف پی سی سی آئی) کی ایگزیکٹو کمیٹی اور جنرل باڈی کے نمائندگان نے ایوان میں اجلاس منعقد کیا اور بیان جاری کیا کہ گذشتہ دو سالوں سے ایف پی سی سی آئی کے الیکشنز میں دھاندلی کی جا رہی ہے جس کی باقاعدہ رپورٹ ڈی جی ٹی او کو بھجوائی گئی ہے پچھلے سال الیکشن میں یو بی جی گروپ کے صدارتی امیدوار خالد تواب کو 5ووٹوں سے واضح برتری حاصل ہوئی لیکن جعل سازی کی وجہ سے حقائق کو چھپایا گیا اور غلط نتائج منظر عام پر لائے گئے جس کے نتیجہ میں بزنس مین پینل گروپ کی جیت کو ظاہر کیا گیا جبکہ تمام حقائق ڈی جی ٹی او کو بھجوائے گئے اور بار ہا کہا گیا کہ حقا ئق پر مبنی درست الیکشن نتائج کا فی الفور اعلان کیا جائے لیکن ڈی جی ٹی او نے اس معاملے کو بغیر کسی وجہ کے التواء میں رکھا ہوا ہے جس سے کارو باری برادری کو شدید تشویش ہے کیونکہ ملک میں کاروبار کی ترقی اور تجارت و صنعت کی بہتری اور خاص طور پر ملکی برآمدات میں اضافہ کیلئے ضروری ہے کہ باوقار اور تجربہ کار بزنس لیڈر شپ ہی ایف پی سی سی آئی کی نمائندگی کرے لیکن ایسا اسی صورت میں ممکن ہے جب ڈی جی ٹی او اپنا شفاف اور غیر متعصب کردار ادا کرے اور منصفانہ فیصلہ جاری کرے انہوں نے کہا کہ ایف پی سی سی آئی الیکشن نتائج کا معاملہ جس میں یو بی جی گروپ نے واضح کامیابی حاصل کی ہے ڈی جی ٹی او کے دفتر میں موجود ہے جسے جان بوجھ کر التواء میں رکھا جا رہا ہے جو ڈی جی ٹی او کی بد نیتی اور غیر منصفانہ رویے کو ظاہر کر تا ہے جبکہ ڈی جی ٹی او کی جانب سے ٹریڈ آرگینائزیشنز کی رجسٹریشن اور الیکشن سمیت تمام معاملات کے منصفانہ اور بر وقت فیصلے کیئے جانے ضروری ہیں۔  ڈی جی ٹی او کا دفتر تمام ٹریڈ آرگینائزیشنز کیلئے انتہا ئی اہمیت کا حامل ہے اور ایسے دفتر میں غیر منصفانہ فیصلے کرنا اور بغیرکسی مناسب وجہ کے فیصلوں کو التواء میں رکھنا ایک طرف کاروباری سر گرمیوں پر منفی اثرات مرتب کرتا ہے اور دوسری طرف ڈی جی ٹی او کی ساکھ خراب کرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ  ایوان تجارت و صنعت ملتان منسٹری آف کامرس حکومت پاکستان سے پُر زور اپیل کرتا ہے کہ ڈی جی ٹی او فی الفور ایف پی سی سی آئی کے الیکشن معاملہ پر منصفانہ فیصلہ جاری کرے،  منسوخ شدہ ایسو سی ایشنز کے ووٹوں کو شامل نہ کیا جائے اور ایسو سی ایشنز کے لائسینسوں کی تجدید غیر متعصبانہ کی جائے تاکہ ملک کی تمام ٹریڈ آگینائزیشنز کا ڈی جی ٹی او پر اعتماد برقرار رہ سکے اور کاروباری سرگرمیاں پر امن ماحول میں جاری رہیں۔ 

خواجہ صلاح الدین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -