ملاوٹ مافیا کیخلاف شکنجہ تیار، 2ہزار لٹر مضر صحت دودھ تلف

  ملاوٹ مافیا کیخلاف شکنجہ تیار، 2ہزار لٹر مضر صحت دودھ تلف

  

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر)پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ملاوٹی دودھ سے بھری گاڑی پکڑ لی،  2 ہزار لٹر ملاوٹی دودھ تلف کردیا گیاغیر معیاری خوراک فروخت کرنے (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

پر متعدد فوڈ یونٹس کو 3 لاکھ سے زائد کے جرمانے عائد کرے تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوآنہ کی ہدایت پر فوڈ سیفٹی ٹیموں کی ڈی جی خان اور بہاولپور ڈویڑن کے مختلف اضلاع میں ملاوٹ مافیا کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں۔ فوڈ سیفٹی ٹیموں نے 142 فوڈ یونٹس کی چیکنگ کے دوران حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پرمتعدد فوڈ یونٹس کو3 لاکھ سے زائد کے جرمانے عائد جبکہ معیاری خوراک کی عدم فراہمی پر 113 فوڈ پوائنٹس کو بہتری کے لیے وارننگ نوٹسز جاری کیے۔ مظفرگڑھ میں ڈیری سیفٹی ٹیم نے دانی اڈہ کے قریب دودھ بردار گاڑی کو چیک کیا۔ گاڑ ی نمبر PAA 349 میں موجود دودھ کو لیکٹوسکین ٹیسٹ کے ذریعے چیک کیا گیا۔ ٹیسٹ کے دوران دودھ میں پانی اور ڈیٹرجنٹس کی ملاوٹ کیساتھ ساتھ غذائیت کی کمی بھی پائی گئی۔ کارروائی کے دوران 2 ہزار لٹر ملاوٹی دودھ موقع پر تلف کردیا گیا۔ مضر صحت دودھ مظفرگڑھ اور مضافاتی علاقوں میں مختلف ملک شاپس پر سپلائی کیا جانا تھا۔اس کے علاوہ راجن پور میں 2 سنیکس یونٹ کو مس لیبل پاپڑ فروخت کرنے اور رحیم یارخان میں 2 کریانہ سٹور کو کھلے مصالحے فروخت کرنے پر 20،20 ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔ مجموعی طور پر کی گئی کارروائیوں کے دوران2 ہزار 220 لٹر ملاوٹی دودھ، 80 کلو ملاوٹی مصالحے، 35 کلو ناقص گھی اور 145کلو ایکسپائری پروڈکٹس تلف کردی گئیں۔

دودھ تلف

مزید :

ملتان صفحہ آخر -