پاک آرمی اور رینجرز کے جوان ٹرین حادثے کے مقام پر امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں ، آئی ایس پی آر

پاک آرمی اور رینجرز کے جوان ٹرین حادثے کے مقام پر امدادی کارروائیوں میں ...
پاک آرمی اور رینجرز کے جوان ٹرین حادثے کے مقام پر امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں ، آئی ایس پی آر

  

راولپنڈی ( ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈہرکی کے قریب ٹرین حادثے کی امدادی کارروائیوں میں پاک آرمی اور رینجرز کے جوان بھی  شریک ہیں ، آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج اور رینجرز کے جوانوں نے ریلیف اینڈ ریسکیو آپریشن شروع کر دیا ہے ۔ 

آئی ایس پی آر کے مطابق ملٹری ڈاکٹر  عملہ پنو عاقل سے جائے حادثہ پر ایمبو لینس کے ساتھ پہنچا ، ضروری امدادی بحالی کیلئے انجینئرنگ  وسائل بھی متحرک ہیں ،  راولپنڈی سے یو ایس اے آر کا عملہ ہیلی کاپٹر میں روانہ کیا جبکہ زخمیوں کی منتقلی کیلئے ملتان سے دو  ہیلی کاپٹرز روانہ کئے ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ٹیمیں راولپنڈی سے ڈسک کٹر ، ہائیڈرالک سپیڈرز ، لائف لوکیٹرز لے کر گئی تھیں ، ٹرین کی فریم کٹنگ اور بوگیوں میں پھنسے افراد کو نکالنے کا کام جاری ہے ، بیشتر زخمیوں کو رحیم یار خان ، گھوٹکی ، میر پور ماتھلوں کے ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا جبکہ شدید زخمی افراد کو ہیلی کاپٹرز کے ذریعے پنو عاقل پہنچایا جا رہا ہے ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق رحیم یار خان کی ریسکیو 1122 کی ٹیم بھی ریسکیو آپریشن میں شریک ہے ۔

واضح رہے کہ  آج صبح گھوٹکی کے قریب کراچی سے پنجاب جانے والی ملت ایکسپریس اور پنجاب سے کراچی جانے والی سر سید ایکسپریس میں خوفناک حادثہ ہوا جس میں 30 افردا جاں بحق ہونے کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق حادثہ آج صبح پیش آیا جس میں ملت ایکسپریس کی بوگیاں ڈہرکی کے قریب پٹری سے اتر گئیں جبکہ سرسید ایکسپریس آکر ملت ایکسپریس سے ٹکرا گئی ۔

مزید :

قومی -