اپٹماکی واہگہ بارڈر کے راستے بھارت سے درآمدی روئی کے معیاراوروزن کے حوالے سے ایڈہاک کمیٹی تشکیل

اپٹماکی واہگہ بارڈر کے راستے بھارت سے درآمدی روئی کے معیاراوروزن کے حوالے ...

لاہور(کامرس رپورٹر)آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن پنجاب زون (اپٹما) کے چیئرمین ایس ایم تنویر نے گزشتہ روز واہگہ بارڈر کے راستے بھارت سے روئی کی درآمد اور اس کے وزن اور معیار کے حوالے سے اپٹما کی ایڈہاک کمیٹی تشکیل دی ہے جو بھارت سے واہگہ بارڈر کے راستے روئی کی تجارت کا جائزہ لے گی۔گزشتہ روز اپٹما کے اراکین کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اپٹما کے چیئرمین ایس ایم تنویر نے کہا کہ بحری جہاز کے ذریعے بھارت سے پاکستان روئی کی درآمد میں اخراجات 40فیصد بڑھ جاتے ہیں اگر واہگہ بارڈر کے راستے بھارت سے روئی درآمد کی جائے تو 40فیصد اخراجات کم ہو جائیں گے جس سے ٹیکسٹائل انڈسٹری کی پیداواری لاگت کم ہو سکتی ہے

کیونکہ بھارت سے تقریبا ایک ملین روئی کی گانٹھیں درآمد کی جاتی ہیں لہٰذا حکومت واہگہ بارڈر پر انفراسٹرکچر فراہم کرے اور بھارت کے کسٹمز کے حکام سے بات چیت کی جائے گی کہ بھارت سے واہگہ بارڈر کے راستے لاہور روئی کی درآمد کے لئے خصوصی انتظامات کئے جائیں۔

مزید : کامرس