سرکاری چوکیداروں کو 300 روپے تنخواہ دینے کیخلاف درخواست پر حکومت سے جواب طلب

سرکاری چوکیداروں کو 300 روپے تنخواہ دینے کیخلاف درخواست پر حکومت سے جواب طلب

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہورہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس شہزادہ مظہرنے پنجاب کے ہزاروں سرکاری چوکیداروں کو تین سو روپے ماہانہ تنخواہ دینے کیخلاف دائر درخواست پر حکومت سے جواب طلب کر لیا۔انجمن چوکیداران پنجاب کے وکیل اشتیاق چوہدری نے عدالت کے روبرودلائل دیتے ہوئے کہاکہ حکومت پنجاب دیہات میں سرکاری چوکیداروں کوآج بھی تین سو روپے ماہانہ تنخواہ ادا کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کا یہ اقدام مزدور کی کم از کم اجرت دس ہزار مقرر کرنے سے متصادم ہے۔قلیل ترین تنخواہ پرکام کرنیوالے سرکاری چوکیدار فاقہ کشی پر مجبور ہیں لہذا عدالت سرکاری چوکیداروں کی تنخواہیں بڑھانے کے احکامات جاری کرے۔عدالتی حکم کے باوجودمتعلقہ محکموں کی جانب سے جواب داخل نہ کرایا گیا۔جس پر دفاضل عدالت نے حکومت پنجاب کو 15اپریل کے لئے دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔

300 تنخواہ

مزید : صفحہ آخر