یوکرائن کے خطے کرایمیا کی پارلیمنٹ نے روس سے الحاق کی قرار داد منظور کر لی

یوکرائن کے خطے کرایمیا کی پارلیمنٹ نے روس سے الحاق کی قرار داد منظور کر لی ...

                              کیف (ویب ڈیسک) ےوکرائن کے خطے کرایمیا کی پارلیمٹ کے ارکان نے روس سے باضابطہ الحاق کی قرارداد منظور کی ہے۔ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے دھمکی دی ہے کہ روس کو یوکرائن کی خود مختاری کی خلاف ورزی کی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔ کرایمیا کی پارلیمٹ کے اس فیصلے پر 16 مارچ کو رائے شماری کرائی جائے گی۔ یوکرائن کی عبوری حکومت کے ایک وزیر کا کہنا ہے کہ کرایمیا کا روس سے الحاق غیر آئینی اقدام ہے۔ خیال رہے کہ یوکرائن کے علاقے کرایمیا کی زیادہ آبادی روسی زبان بولتی ہے اور یوکرائن میں روس کے حامی صدر کے معزول ہونے کے بعد سے کرایمیا کا مسئلہ بحران کی شکل اختیار کر گیا ہے۔ دوسری جانب امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے یوکرائن کے مسئلے پر روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے ملاقات کو ’مشکل‘ قرار دیا ہے تاہم ان کا کہنا ہے کہ بات چیت کا عمل جاری رہے گا۔ پیرس میں روسی وزیرِ خارجہ سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ وہ اس مسئلے کے حل کے لیے روس کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ پریس کانفرنس میں امریکی وزیرِ خارجہ نے ایک بار پھر کہا کہ ''روس کو یوکرائن کی خود مختاری کی خلاف ورزی کی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔ ا±دھر شمالی بحرِ اوقیانوس کے ممالک کی تنظیم نیٹو کے سیکریٹری جنرل آندریس فو راسموسین نے کہا ہے کہ یوکرین کی صورتحال کی وجہ سے تنظیم روس سے اپنے تمام روابط پر نظرِ ثانی کر رہی ہے۔ راسموسین کا یہ بھی کہنا ہے کہ نیٹو شام کے کیمیائی ہتھیار ناکارہ بنانے کے لیے روس کے ساتھ اپنے مشترکہ مشن کو بھی معطل کر رہی ہے تاہم اس کا اثر ہتھیاروں کی تباہی کے عمل پر نہیں پڑے گا۔ انھوں نے کہا کہ روس مسلسل یوکرین کی خود مختاری کی خلاف ورزی کر رہا ہے اور نیٹو اب یوکرائن سے اپنے تعلقات مضبوط کرے گی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق روس نے نیٹو پر دوہرے کردار اور سرد جنگ کے روایتی حربے بروئے کار لانے کا الزام عائد کر دیا ہے۔ روس کی طرف سے یہ الزام مغربی ممالک کے اس موقف کے بعد سامنے آیا ہے کہ وہ روس کے ساتھ یوکرائن کے معاملات کی وجہ سے تعاون پر نظر ثانی کر رہے ہیں۔                       

مزید : علاقائی