کور کمانڈرز کانفرنس :فوج مذاکرات کا حصہ نہیں بنے گی؛حساس اداروں کا نمائندہ مذاکرات کا حصہ ہو سکتا ہے،ذرائع

کور کمانڈرز کانفرنس :فوج مذاکرات کا حصہ نہیں بنے گی؛حساس اداروں کا نمائندہ ...
 کور کمانڈرز کانفرنس :فوج مذاکرات کا حصہ نہیں بنے گی؛حساس اداروں کا نمائندہ مذاکرات کا حصہ ہو سکتا ہے،ذرائع

  

راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک)پاک فوج نے طالبان سے حکومت کے براہ راست مذاکرات میں نمائندہ نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔راولپنڈی میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے زیر صدارت کور کمانڈرز کانفرنس ہوئی جس میں ملک کی موجودہ داخلی اور خارجی سیکیورٹی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ کانفرنس کے شرکاءنے مختلف پیشہ وارانہ امور پر تفصیلی غور بھی کیا۔ ذرائع کے مطابق پاک فوج نے طالبان کے ساتھ حکومت کے براہ راست مذاکرات کا حصہ نہ بننے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ ماضی میں فوج نے جتنے بھی مذاکرات کئے ان کے نتائج اچھے نہیں تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حساس اداروں کا نمائندہ مذاکرات کا حصہ ہو سکتا ہے تاہم ابھی تک حکومت کی جانب سے فوج کے نمائندے کی مذاکراتی کمیٹی میں شمولیت کے حوالے سے نہیں کہا گیا۔ ذرائع کے مطابق عسکری قیادت سمجھتی ہے کہ مذاکرات کرنا یا نہ کرنا حکومت کا فیصلہ ہے، فوج کا کام دفاع ہے اس لئے فوج ان مذاکرات کا حصہ نہیں بننا چاہتی۔

مزید : راولپنڈی /Headlines