وزیراعظم کے دورہ سعودی عرب سے باہمی تعلقات میں اضافہ ہوگا

وزیراعظم کے دورہ سعودی عرب سے باہمی تعلقات میں اضافہ ہوگا

لاہور )کامرس رپورٹر( لاہور چیمبر کے سابق سینئر نائب صدر اور پولٹری ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین عبدالباسط نے کہا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کے موجودہ دورہ سعودی عرب سے دونوں برادر ملکوں کے تعلقات میں تازگی اور مضبوطی بڑھے گی۔پاکستان کا کاروباری طبقہ روحانی اور دینی رشتوں کی وجہ سے سعودی عرب کو اپنے تجارتی معاملات اور سفر میں ہمیشہ فوقیت دیتا ہے اور دیتا رہے گا ۔ہر سعودی حکومت نے مشکل وقت میں پاکستان کی بھرپور مدد کی ہے . پاکستان کا ہر فرد ان جذبات و احساسات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے . انہوں نے کہا ہے تجارت سرمایہ کاری اور دہشت گردی پاکستان کے حقیقی مسائل ہیں اس لیے سعودی فرما روا کی طرف سے ان شعبوں میں تعاون در اصل پاکستان کی حقیقی ضرورتوں کا ادراک ہے . عبدالباسط نے کہا ہے کہ دونوں ملکوں کے کاروباری ماہرین مل بیٹھ کر باہمی ضرورتوں کا تعین کر لیں گے تو پاکستان کا کاروباری طبقہ پولٹری سمیت سعودی حکومت اور کاروباری طبقہ کی حج کے موقع کی تمام ضرورتوں کو خوش دلی سے پورا کرے گا . عبدالباسط نے کہا ہے پاکستان کی بزنس کمیونٹی سعودی عرب کے ساتھ تجارت محض مالی منفعت کے لیے نہیں کرتی بلکہ دینی ضرورتوں اور عقاعد کی آبیاری کے لیے تجارت کرنا اور بڑھانا چا ہتی ہے .

انہوں نے اعلان کیا ہے کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے دورہ پاکستان کے موقع پر پاکستان کا کاروباری طبقہ دل کی گہرائیوں سے ان کا بے مثال استقبال کرے گا . عبدالباسط نے کہا ہے کہ ملک میں سینٹ الیکشن کے باوجود سعودی فرما روا کی دعوت پر وزیر اعظم کا سعودی عرب کا دورہ گہری عقیدت و محبت کا مظہر ہے جو شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے دور میں بلندیوں کو چھوئے گی. عبدالباسط نے کہا ہے کہ سعودی فرما روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کا وزیر اعظم پاکستان کے استقبال کے لیے ایئرپورٹ پر پہنچنا دراصل پاکستان کی قدر افزائی ہے جس کے لیے پاکستان کا کاروباری طبقہ اور عوام ان کے شکر گزار ہیں ۔

مزید : کامرس


loading...