دہشتگردوں کیساتھ انکے سہولت کاروں کا بھی خاتمہ کرینگے ،نواز شریف

دہشتگردوں کیساتھ انکے سہولت کاروں کا بھی خاتمہ کرینگے ،نواز شریف

 مدینہ منورہ(آن لائن، مانیٹرنگ ڈیسک، اے این این) وزیر اعظم نواز شریف نے کہاہے کہ دہشتگردوں اور ان کے سہولت کاروں کو ختم کر کے دم لیں گے،ملک کا امن خراب کرنے والوں کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا،اکیسویں آئینی ترمیم اور فوجی عدالتوں کے قیام کو تمام جماعتوں اور پوری قوم کی حمایت حاصل ہے،2017تک ملک سے بجلی بحران کا خاتمہ کر دیا جائے گا،زرمبادلہ کے ذخائر میں 3ارب ڈالر اضافہ ہوا ہے، حکومتی فیصلوں میں شفافیت کو ہر سطح پریقینی بنایا جارہا ہے،عام انتخابات 2018ہی میں ہونگے،مدینہ منورہ میں پاکستانی کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سینٹ انتخابات سے جمہوری عمل کا ایک اور مرحلہ مکمل ہوگیاہے۔ حکومت جمہوری اداروں کی مضبوطی اور ان کے تقدس پر یقین رکھتی ہے۔ حکومت سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کے لئے آئین میں ترمیم لانا چاہتی تھی لیکن بعض جماعتوں نے اس کی حمایت نہیں کی۔ 2018 قومی اسمبلی اور سینٹ دونوں کے انتخابات کا سال ہوگا جن کیلئے حکومت تمام جماعتوں کے تعاون سے انتخابی اصلاحات متعارف کروائے گی۔انشا اللہ2018 کے انتخابات ہر قسم کی خامیوں سے پاک ہوں گے،تمام جماعتوں کے تعاون سے دوررس انتخابی اصلاحات کریں گے۔وزیر اعظم نے کہا کہ مسلم لیگ ن پر گزشتہ عام انتخابات میں دھاندلی کا الزام بے بنیاد ہے،صوبوں اور وفاق میں نگران حکومتیں مسلم لیگ (ن) کی نہیں تھیں۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کی بہتری کے لیے ہرقدم اٹھائیں گے اوردہشت گردوں کے ساتھ ان کے سہولت کاروں کا بھی خاتمہ کریں گے۔ پاکستان کا امن خراب کرنے والوں کو کسی صورت برداشت نہیں کریں گے ،دہشتگردی پر قابو پانے کے لئے حکومت نے جرأت مندانہ فیصلے کئے جس کے پیش نظر دہشتگردی کے مکمل خاتمے کے لئے آپریشن ضرب عضب شروع کیا جس میں پاک فوج کو اہم کامیابیاں ملیں اور تمام سیاسی جماعتوں کے اتفاق رائے سے آرمی ایکٹ میں ترمیم بھی کی۔ انہوں نے کہا کہ موثر حکومتی اقدامات کی بدولت کراچی کے حالات تیزی سے بہتری کی طرف جارہے ہیں اگرماضی میں بروقت فیصلے کئے جاتے تو اس طرح کے چیلنجز کے سامنا نہ کرنا پڑتا تاہم عزم کر رکھا ہے کہ کراچی میں امن کی روشنیاں بحال کریں گے۔نواز شریف نے سمندر پار پاکستانیوں کو خوشخبری دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ 3 برسوں میں پاکستان سے بجلی کی لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ ہوجائے گا اور سال 2017 تک 10 ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں آجائے گی جس سے ملک میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی ۔2017 تک ایل این جی سے 3600 میگا واٹ بجلی حاصل کریں گے، 2017 کے آخر تک 10 ہزار میگا واٹ بجلی نطام میں شامل کریں گے۔کراچی تا پشاور موٹر وے اور شاہراہوں کا جال بچھائیں گے، کراچی لاہور موٹر وے کے لئے اراضی کی خریداری ہو چکی ہے۔گوادر سے خنجراب تک شاہراہ تعمیر کریں گے، 20 ہزارمیگاواٹ کے طویل المدتی منصوبوں پر کام جاری ہے۔ ملکی معیشت میں سمندر پار پاکستانیوں کا کردار اہم ہے اور حکومت اصلاحات کے ذریعے طرز حکمرانی مزید بہتر بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل حکومتی فیصلوں کی شفافیت کی تائید کررہی ہے،جب حکومت سنبھالی تو زرمبادلہ کے ذخائر 8 ارب ڈالر سے کم تھے لیکن اب اسٹیٹ بینک کے ذخائر بھی 11 ارب ڈالرزتک پہنچ چکے ہیں اور امید ہے کہ اس میں مزید بہتری لائی جائے گی جب کہ حکومتی فیصلوں میں شفافیت کو ہر سطح پریقینی بنایا جارہا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ افغان صدر سے مختلف امور پر ہم آہنگی ہے اور افغانستان سے تعلقات میں بھی بہتری آئی ہے جب کہ بھارت کی جانب سے سرحد پر فائرنگ کے واقعات باعث تشویش ہیں۔پاکستان بھارت سمیت تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے ہم کشمیر سمیت تمام تصفیہ طلب مسائل کا مذاکرات کے ذریعے پر امن حل چاہتے ہیں۔

نواز شریف

مدینہ منورہ (آئی این پی) وزیراعظم نواز شریف نے کل مسجد نبویؐ میں نماز جمعہ ادا کی اور روضہ رسولؐ پر حاضری بھی دی‘ وزیراعظم جدہ سے مدینہ منورہ پہنچے تو ان کا ایئر پورٹ پر گورنر مدینہ اور دیگر اعلیٰ حکام نے استقبال کیا تھا ۔ نواز شریف نے گزشتہ رات وفد کے ہمراہ مسجد نبوی میں نماز عشاء اور نوافل ادا کئے تھے۔ وزیراعظم نماز جمعہ کی ادائیگی کے لئے مسجد نبوی میں پہنچے تو اس موقع پربڑی تعداد میں پاکستانی بھی موجود تھے جنہوں نے وزیراعظم کو دیکھ کر ان سے اپنی محبت اور وابستگی کا اظہار کیا۔ وزیراعظم سعودی سکیورٹی کے سخت انتظامات کے باوجود پاکستانیوں سے مل کر ان کی محبت کا جواب دیتے رہے۔ وزیراعظم نے تمام پاکستانیوں سے کہا کہ وہ مسجد نبوی اور روضہ رسولؐ پر اﷲ تعالیٰ کے حضور سربسجود ہو کر وطن عزیز کے لئے خصوصی دعاکریں کہ وہ پاکستان کو موجودہ تمام مسائل سے نکال کر ترقی‘ سلامتی اور خوشحالی عطا فرمائے۔ وزیراعظم کے وفد کے ارکان نے نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد نوافل بھی ادا کئے اور روضہ رسول پرپاکستان کی ترقی‘ سلامتی اور خوشحالی کیلئے اﷲ کے حضور گڑگڑا کر اشکبار آنکھوں سے دعائیں کیں۔وزیراعظم جب نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد واپسی کیلئے مسجد کے صحن میں آئے تو مدینہ اور گرد و نواح سے بڑی تعدا دمیں وہاں نماز ادا کرنے کیلئے آئے ہوئے پاکستانیوں نے انہیں دیکھ کر پاکستان زندہ باد اور نوا ز شریف زندہ باد کے نعرے لگائے ، وزیراعظم وہاں بڑی تعداد میں پاکستانیوں سے ملے ، وہ مسجد نبوی میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد اپنا سعودی عرب کا دورہ مکمل کر کے پاکستان واپس روانہ ہوگئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...