مسلم لیگ (ن) نے سینیٹ انتخابات میں بیوفائی کرنیوالے اراکین کی تلاش شروع کر دی

مسلم لیگ (ن) نے سینیٹ انتخابات میں بیوفائی کرنیوالے اراکین کی تلاش شروع کر دی

 لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ (ن)نے سینٹ کے انتخابات میں اپنی پارٹی کے امیدواروں کو ووٹ دینے کی بجائے بیوفائی کرنیوالے اراکین اسمبلی کی تلاش شروع کر دی ہے۔جس کیلئے سراغ رساں کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں۔تحقیقات کیلئے کے پی کے اور پنجاب میں الگ الگ کمیٹیاں تشکیل د ی گئی ہیں۔پنجاب میں اپنی پارٹی سے بیوفائی کرنیوالے اراکین اسمبلی کا چہرہ سامنے لانے کیلئے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے بھی نوٹس لے لیا ہے اور انہوں نے پنجاب کے اعلیٰ سرکاری افسروں کو خفیہ تحقیقا ت کر کے بے وفائی کرنیوالے اراکین اسمبلی کے نام پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ذرائع نے دعوٰی کیا ہے کہ ابتدائی طور پر پنجاب میں 25اراکین پنجاب اسمبلی کو بے وفا قرار دے دیا گیا ہے۔ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کے امیدوار ندیم افضل چن کو ووٹ دینے کے الزام میں سرگودھا ڈویژن کے چار اراکین اسمبلی کے نام وزیر اعلیٰ کو پیش کیے گئے ہیں۔جن میں ایک خاتون رکن اسمبلی بھی شامل ہے۔اس سلسلے میں ایسے اراکین اسمبلی کا ندیم افضل چن سے رابطوں کا ریکارڈان کے موبائل نمبروں سے ڈیٹا سے حاصل کیا گیا ہے۔جبکہ دوسری طرف خیبر پختونخواہ میں بھی نواز لیگ سے بیوفائی کرنیوالے ایسے اراکین اسمبلی بے نقاب کرنے کیلئے دو رکنی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔اس حوالے سے بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں جنرل نشست پر15(ن)لیگی ارکان اسمبلی مسترد ہوئے ہیں جن کی تحقیقات ہو رہی ہیں کہ انہوں نے ایسا کیو ں کیا۔پیپلز پارٹی کے امیدوار ندیم افضل چن کو جن مسلم لیگ(ن)کے اراکین اسمبلی نے ووٹ دیئے ہیں ان میں سے چار کے نام سامنے لا کر کمیٹی نے نام وزیر اعلیٰ کو پیش کر دیئے ہیں۔سینٹ انتخابا ت میں مسلم لیگ(ن)کے اراکین اسمبلی کو اپنی پارٹی سے بیوفائی کے بعدپارٹی میں بھونچال آگیا۔

مزید : صفحہ اول


loading...