سینیٹ کا چیئرمین اور ڈپٹی چیئر مین پیپلز پارٹی سے ہو گا، منظور وٹو

سینیٹ کا چیئرمین اور ڈپٹی چیئر مین پیپلز پارٹی سے ہو گا، منظور وٹو

لاہور( نمائندہ خصوصی)پیپلز پارٹی سنٹرل پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے اعلان کیا ہے کہ ان کی جماعت کو برتری حاصل ہو گئی ہے لہٰذا سینیٹ کا چےئرمین اور ڈپٹی چےئرمین پیپلز پارٹی سے ہو گا۔ لاہور میں پریس کانفرنس سے کرتے ہوئے منظور وٹو کا کہنا تھاکہ سینیٹ کے حالیہ الیکشن میں پیپلز پارٹی کو عددی اکثریت حاصل ہو گئی جبکہ عوامی نیشنل پارٹی،متحدہ قومی موومنٹ، مسلم لیگ(ق) جمعیت علماء اسلام (ف) آزاد سمیت فاٹا ارکان کے تعاون سے سینیٹ کے اعلیٰ ترین عہدوں کو حاصل کر لیں گے۔انہوں نے صدارتی آرڈیننس کے اجراء کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ اس اقدام سے فاٹا اراکین اسمبلی کو ووٹ کے حق سے محروم کرنا ان کی توہین کے مترادف ہے اور ممکنہ طور پر فاٹا کے عہدیداران رد عمل کے طور پر حکومت کا ساتھ نہیں دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ آدھی رات کے وقت صدارتی آرڈیننس کے اجراء سے سینیٹ انتخابات کسی حد تک متنازعہ بھی ہو گئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے بائیسویں ترمیم پاس کرانے کیلئے جلد بازی سے کام لیا جس کاکوئی فائدہ نہ ہوا۔ منظور احمد وٹو نے کہا کہ آئین میں ترمیم لانے کے لیے ضروری تھا کہ تمام سیاسی قائدین سے مشاورت کر کے مفاہمت پیدا کی جاتی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف نے پنجاب میں حکومتی پارٹی کو چاندی کی پلیٹ میں رکھ کر ایک سیٹ دے دی جبکہ لوگ یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ پی ٹی آئی نے 3 صوبوں میں سینیٹ الیکشن کا بائیکاٹ کیا اور خیبر پختونخوا میں بھرپور حصہ لے کر دوہرے معیار کی اعلیٰ مثال قائم کر دی، اس موقع پر تنویر اشرف کائرہ، دیوان محی الدین اور عابد حسین صدیقی بھی موجود تھے۔

مزید : صفحہ آخر