شہباز شریف کو اپنے لوگوں پر اعتماد ہوتا تو عمرہ چھوڑ کر نہ بھاگتے: پرویز الہٰی

شہباز شریف کو اپنے لوگوں پر اعتماد ہوتا تو عمرہ چھوڑ کر نہ بھاگتے: پرویز الہٰی
شہباز شریف کو اپنے لوگوں پر اعتماد ہوتا تو عمرہ چھوڑ کر نہ بھاگتے: پرویز الہٰی

  

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ کے سینئر مرکزی رہنما چودھری پرویز الہٰی نے کہا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں ن لیگی ارکان کی بغاوت سامنے آگئی اور اسے روکنے کے تمام حکومتی حربے ناکام رہے، اپوزیشن کو چاہیے کہ وہ سینیٹ میں چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کے عہدے حاصل کرنے کیلئے متحد ہوجائے۔ تفصیلات کے مطابق پرویز الہٰی نے کہا کہ فاٹا سے سینیٹ الیکشن کے بارے میں صدر مملکت سے ایک ایسا آرڈیننس جاری کرادیا جس سے وہاں ارکان کا انتخاب عمل میں نہیں آسکا۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات ثابت ہوگئی ہے کہ موجودہ صدر کا کردار صرف ربڑ سڑمپ کا ہے، انہیں ایسا غیر آئینی اور مہم آرڈیننس جاری نہیں کرنا چاہئیے تھا۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ن لیگ کے حکمرانوں نے اپنے ارکان اسمبلی کی بغاوت کو روکنے کیلئے آئین میں ترمیم کی ناکام کوششوں اور ارکان کی مکمل نگرانی کے علاوہ لالچ، دھونس اور دھمکیوں سمیت ہر حربہ استعمال کیا لیکن پنجاب اور بلوچستان میں صوبائی اسمبلیوں کے ارکان نے اپنی پارٹی قیادت کے نامزد کردہ امیدواروں کو ووٹ نہ دے کر ان کی پالیسیوں پر مکمل عدم اعتماد کا بھرپور اظہار کیا۔ آئی این پی کے مطابق پرویز الہٰی نے کہا کہ شہباز شریف کو عمرہ چھوڑ کر پنجاب اسمبلی پہنچنا پڑا، اپنے لوگوں پر اعتماد ہوتا تو عمرہ چھوڑ کر نہ بھاگتے۔

مزید : لاہور