کاہنہ ،معمولی تنازع پرقتل نوجوان کے ملزم گرفتارنہ ہوسکے

کاہنہ ،معمولی تنازع پرقتل نوجوان کے ملزم گرفتارنہ ہوسکے

لاہور(وقائع نگار) کاہنہ کے گاؤں بلاوالا کھو میں معمولی تنازع پر قتل ہونے والے نوجوان کے مرکزی قاتل کو پولیس تاحال گرفتار نہ کر سکی ۔پولیس کے مطابق سولہ سالہ اعجاز اسلام گاؤں بلا والا کھو کا رہائشی تھا، اس کے گاؤں کی لڑکیاں قریبی گاؤں دھلوکی کے سکول میں پڑھنے جاتی تھیں جن کو دھلوکی کے چند اوباش لڑکے چھیڑتے تھے۔اس حوالے سے جب گاؤں کے افراد بات چیت کرنے دھلوکی گئے تو راستے میں ان اوباش لڑکوں نے ان پر حملہ کر دیا جس کے نتیجے میں اعجازموقع پر جاں بحق ہو گیا جبکہ شبیر ولد نکو کے سر پر ڈنڈے کا وار کیا گیا جس سے اس کا سر پھٹ گیا اور شبیر ولد قمر دین کی دائیں ٹانگ پر لاٹھیوں کے وار کر کے اس کو زخمی کر دیا گیا۔پولیس کے مطابق اعجاز کو گولی لگی جو کہ اس کی کمر سے ہوتی ہوئی سینے سے نکل گئی۔ مقتول کے والد محمد اسلام کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیا۔ چار ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے جن میں یاسر ولد محمد دین،ذیشان عرف چٹھا ولد اکبر،ماسٹر محمد اقبال اوراکبر شامل ہیں۔ پولیس تاحال مرکزی ملزم کو گرفتار نہیں کر سکی ہے ۔پولیس کے مطابق ملزم کو گرفتار کرنے کے لیے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے جلد ہی اس کو پکڑ لیا جائے گا۔

مزید : علاقائی