گندے پانی کے باعث پی پی147میں امراض پھیل رہے ہیں،شعیب صدیقی

گندے پانی کے باعث پی پی147میں امراض پھیل رہے ہیں،شعیب صدیقی

لاہور(خبر نگار خصوصی) ممبر صوبائی اسمبلی پنجاب محمد شعیب صدیقی نے بتایا ہے کہ این اے 122اور پی پی 147کی مختلف یونین کونسلوں کے پانی میں آرسینک کی موجودگی کی تصدیق کے بعد ان علاقوں میں ہیپاٹائٹس ،پیٹ کی بیماریاں اور دیگر امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں جبکہ دوسری طرف حکومتی بے حسی انتہاء پر ہے جو نا خود کوئی کام کرنا چاہتی ہے اور نہ دوسروں کو کرنے دیتی ہے اس کے واضح مثال یہ ہے کہ این اے 122کی ہر یونین کونسل میں عبدالعلیم خان فاؤنڈیشن کی طرف سے واٹر فلٹریشن پلانٹس کی تنصیب کا فیصلہ کیا گیا جس کے تحت ہر وارڈ میں ایک اور ہر یونین کونسل میں 6واٹر فلٹریشن پلانٹ نصب ہونا ہیں لیکن ٹاؤن انتظامیہ پولیس کے ذریعے روڑے اٹکا رہی ہے اور اپنی مدد آپ کے تحت شروع ہونے والے اس منصوبے کو روکنے کیلئے اوچھے ہتھکنڈے اختیار کیے جا رہے ہیں ،شعیب صدیقی نے کہا کہ ہرواٹر فلٹریشن پلانٹ پر 4لاکھ روپے کے لگ بھگ خرچ آنا ہیں ، یہ سارا خرچ عبدالعلیم خان نے اس علاقے کی بلاتفریق خدمت کیلئے اپنی جیب سے خرچ کرنا ہیں اور یہ منصوبہ کسی سیاسی وابستگی سے بالاتر ہو کر عوام الناس کی بہتری اور اچھی صحت کیلئے ہے لیکن موجود ہ حکمرانوں کو عام آدمی سے کوئی دلچسپی نہیں اور ان کی ساری توجہ میٹرو اوراورنج لائن ٹرین جیسے بھاری بھر کمیشن والے منصوبوں میں ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1