جو قومیں تحاریک چلا کر قربانیاں دیتی ہیں وہ ہمیشہ زندہ رہتی ہیں :اکرم درانی

جو قومیں تحاریک چلا کر قربانیاں دیتی ہیں وہ ہمیشہ زندہ رہتی ہیں :اکرم درانی

بنوں(نمائندہ پاکستان)وفاقی وزیر اکرم خان درانی نے سپورٹس کمپلیکس بنوں میں شیخ الہند کانفرنس سے خطاب کرتے ہُوئے کہا ہے کہ جو قومیں تحاریک چلا کر قربانیاں دیتی ہیں وہ ہمیشہ زندہ رہتی ہیں اور جو بھی تحریک چلائی گئی ہیں نمائندگی علماء نے کی ہے اس خطہ میں موجودہ طور پر جے یو آئی مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں تحریک چلا رہی ہے 60ہزار سے زائد علماء نے تحریک آزادی سمیت متعدد تحریکوں کے دوران جام شہادت نوش کیا بہت سے علماء کرام کو بغیر جنازے کے دفنایا گیا کیونکہ انگریز علماء کو چن چن کر قتل کرتے تھے۔ مگر آج نہایت آفسوس سے کہنا پڑرہاہے کہ علماء کرام کی پگڑیاں اُچھالی جا رہی ہیں اور ہمارے حکمران مغربی قوتوں کے غلام بن گئے ہیں مگر یہ مغربی قوتیں تجارت کے عوض یہاں آگئے برصغیر پاک و ہند میں ایسٹ انڈیا کمپنی کے نام پر تجارت شروع کی اور اسی طرح طرح آہستہ آہستہ ہماری معیشت پر قابض ہو کر یہاں پر ہمارے حکمرانوں نے اُنہیں اپنا آقا بنایا ۔ہمارا خطہ معدنیات اور وسائل سے مالامال ہو کر بھی یہاں کے 75فیصد عوام بے روز گاری کے عالم میں ہیں جب تک امن کے نام پر آنے والی مغربی طاقتوں کی دخل اندازی بند نہ کی گئی ہوں امن کا قیام نا ممکن ہے کیونکہ امن کے نام پر ہمارے گھروں میں آگ برسائی گئی قتل عام کیا گیا ہماری مائیں ،بچے اور بوڑھوں کو بھی نہیں بخشا گیا ۔اُنہوں نے کہا کہ بڑے پیمانے پر مواصلاتی نظام کیلئے اربوں روپے مختص کئے جا رہے ہیں جس میں ریلوے ٹریک اور موٹروے شامل ہیں اسی طرح بنوں ائیر پورٹ کو بین الااقوامی ایئر پورٹ کا درجہ دینے کیلئے کوششیں کی جا رہی ہیں۔ ضلع کرک میں صوبائی منصوبہ بنایا جا رہا ہے جسے ہم کسی صورت پایہ تکمیل پہنچانے نہیں دیں گے کیونکہ یہ ضلع کی فنڈ ہے اور اسے صوبائی منصوبہ پر خرچ نہیں ہونے دیں گے۔ کانفرنس سے صوبائی امیر مولانا گل نصیب،مولانا عطاؤ الرحمن ،مولانا شجاع الملک ،راحت حسین ،قاری عبداللہ،ضلعی جنرل سیکرٹری محمدنیاز خان ،مولانا مفتی عبدالشکور،مولانا عبدالوحد ،مفتی عبدالقادر ،مولانا اعزا اللہ حقانی،ملک احسان ،حاجی مقبول زمان حیدر و دیگر نے بھی خطاب کیا ۔مقررین نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام کا قیام1919میں ہندوستان کے صوبہ امرتسر میں واقع ایک مسجد میں ہندوستان کے نامور علماء کرام نے تشکیل دیا تھا اسی طرح آئین اور مختلف قرار دادوں میں ان علماء نے بنیادی کردار اد کیا ہے جمعیت علماء اسلام ملک میں اسلامی نظام کا قیام چاہتی ہے ۔ مقررین نے کہا کہ اپریل 2017میں صد سالہ تقریب منعقد ہوگی کسی بھی پارٹی یا جماعت کو یہ مقام حاصل نہیں جنہوں نے اپنی صد سالہ بہاریں دیکھی ہوں۔ اُنہوں نے کہا کہ 1867میں علماء نے فیصلہ کیا کہ انگریزوں سے تلوار یا بندوق سے نہیں بلکہ دین کی ذریعے جنگ لڑیں گے اور اسی مناسبت سے دیوبند مدرسہ کے اول طالب علم حضرت مولانا شیخ الہند تھے جنہوں نے شعور آگاہی حاصل کرکے اسی مدرسہ میں درس و تدریس کا سلسلہ شروع کرکے علماء کرام پر مشتمل ایک ٹولہ بنایا جس کا ہر ایک شاگرد امت کیلئے مینار ثابت ہُوا ۔مقررین نے کہا کہ ممتاز قادری کو دی جانے والی پھانسی مغربی قوتوں کی خوشنودی کی خاطر دی گئی۔اسی طرح حقوق نسواں بل جوکہ 1973کے آئین دفعات اور شریعت کے منافی ہیں جس میں ایک خاتون کو خاوند یا بھائی کن آنکھوں سے بھی دیکھیں تشدد کے مترادف ہوگا اور خاتون کی جانب سے درج مقدمہ اس وقت تک ہٹایا نہیں جا ئے گا جب تک خاتون اُنہیں معاف نہ کرے یہ مغربی سوچ کی عکاسی ہے ہمیں دنیا کو پیغام دینا ہے کہ ہم لیبرل یا سیکولر نہیں بلکہ اسلام کے حامی ہیں ۔مقررین نے کہا کہ ضلع بنوں میں ضلعی حکومت بنانے میں سابق اور موجودہ وزراء اعلیٰ کے مابین مقابلہ ہے جس میں پی ٹی آئی کے ممبران بنوں کی سرزمین پر رحم کرکے جے یو آئی کو ان کی کاکردگی اور بنوں کو ایک نمایاں حیثیت دینے میں جے یو آئی کا ساتھ دیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول