بھارت میں 250 روپے کا موبائل فون ایجاد کرنے کا ڈرامہ بے نقاب ہوگیا

بھارت میں 250 روپے کا موبائل فون ایجاد کرنے کا ڈرامہ بے نقاب ہوگیا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک نئی موبائل فون ساز کمپنی رنگنگ بیلس(Ringing Bells)اس وقت بھارت میں تہلکہ مچا دیا جب اس نے اعلان کیا کہ وہ دنیا کا سستا ترین سمارٹ فون بنانے جا رہی ہے اور اس فون کی قیمت محض 251بھارتی روپے(تقریباً391روپے)ہو گی۔ بعد میں کمپنی نے اپنے وعدے کے مطابق فریڈم 251کے نام سے وہ سمارٹ فون مارکیٹ میں پیش بھی کر دیا لیکن اب انکشاف ہوا ہے کہ یہ بہت بڑا دھوکا تھا اور اس کمپنی نے بھارتی شہریوں کو ’ماموں ‘بنایا ہے۔رنگنگ بیلس چند ماہ قبل کی رجسٹرڈ ہوئی ہے اور اس کا مرکزی دفتر بھارتی شہر نوائیڈا میں ہے۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق رنگنگ بیلس نے اپنا سمارٹ فون بنانے کی بجائے ایک اور بھارتی سمارٹ فون ساز کمپنی ایڈکام کا ماڈل آئیکون 4خریدا اور اس پر فریڈم 251کے مونوگرام لگا کر مارکیٹ میں فروخت کے لیے پیش کر دیا۔ رنگنگ بیلس نے ایڈکام سے یہ فون 3600بھارتی روپے(تقریباً5ہزار 628روپے)میں خریدا اور اپنی نئی نویلی کمپنی کو بھارت میں مشہور کرنے کے لیے اسے 251روپے میں فروخت کر ڈالا۔رپورٹ کے مطابق رنگنگ بیلس نے ایڈکام سے ہزاروں کی تعداد میں اس ماڈل کے آئی فون خریدے تھے۔اتنی بڑی تعدادمیں سمارٹ فونز خرید کر ان کی ہیئت تبدیل کرنے اور ایڈکام کا مونوگرام ہٹا کر اپنا لگانے میں رنگنگ بیلس کے ملازمین نے کئی غلطیاں کیں۔ مارکیٹ میں فروخت کے لیے بھیجے گئے فریڈم 251کے کئی ماڈلز پر ایڈکام بھی لکھا ہوا تھا جس سے ان کی چوری پکڑی گئی۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ایڈکام کے بانی اور چیئرمین سنجیو بھاٹیا کا کہنا تھا کہ ’’میں اعتراف کرتا ہوں کہ ایڈکام نے رنگنگ بیلس کو اپنے فون فروخت کیے تھے، بالکل اسی طرح جیسے ہم اپنے لاکھوں دیگر گاہکوں کو فروخت کر رہے ہیں۔ ہمیں قطعاً اندازہ نہیں تھا کہ کمپنی ہم سے فون خرید کر انہیں اپنے نام سے دوبارہ بیچنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ رنگنگ بیلس نے ہماری ساکھ کو نقصان پہنچایا ہے اور ہمارے برانڈ کا نام بدنام کیا ہے اس لیے ہم اس کے خلاف قانونی کارروائی کریں گے۔‘‘

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر