کراچی، سپریم کورٹ کا لارجر بنچ آج بدامنی کیس کی سماعت کرے گا

کراچی، سپریم کورٹ کا لارجر بنچ آج بدامنی کیس کی سماعت کرے گا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سپریم کورٹ کا لارجر بنچ 20 ماہ بعد کراچی بے امنی عملدرآمد از خود نوٹس کی سماعت آج سے کراچی رجسٹری میں کرے گا۔ سماعت کے دوران ایک بار پھر عدالتی احکامات کی روشنی میں کراچی میں قیام امن کیلئے جاری آپریشن اورمحکمہ ریونیو ،زمینوں پر قبضے سمیت دیگر اہم معاملات کا جائزہ لیاجائے گا۔کراچی بے امنی عملدرآمد از خود نوٹس کیس کی سماعت کے لئے سپریم کورٹ کا پانچ رکنی لارجر بینچ چیف جسٹس انور ظہر جمالی کی سربراہی میں تشکیل دیا گیا ہے ۔بنچ میں جسٹس امیر ہانی مسلم ، جسٹس عظمت سعید، جسٹس فیصل عرب اور جسٹس خلجی عارف حسین بھی شامل ہونگے۔آج سے شروع ہونے والی سماعت کیلئے وفاقی و صوبائی حکومت ، ڈی جی رینجرز ، آئی جی سندھ اور دیگر حکام کو نوٹس جاری کرتے ہوئے رپورٹس طلب کی گئی ہیں۔ واضح رہے کہ کراچی بے امنی عملدرآمد کیس کی آخری سماعت 24جون 2014کو ہوئی تھی جس میں عدالت نے سرکاری زمینوں پر قبضے اور تجاوزات پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے حکم دیا تھا کہ حکومت سندھ اور محکمہ بورڈ آف ریونیو، زمینوں پر قبضے اور تجاوزات کا خاتمہ کر کے رپورٹ 6ماہ میں پیش کریں ۔امکان ہے کہ ایک بار پھر عدالتی احکامات کی روشنی میں ان اہم معاملات کا جائزہ لیا جائیگا۔اس موقع پر وفاقی و صوبائی حکومت ، ڈی جی رینجرز ، آئی جی سندھ اور دیگر حکام اپنی اپنی رپورٹ بھی سپریم کورٹ کے روبرو پیش کرینگے۔

مزید : ملتان صفحہ اول