آج کل سیاست روز نیا موڑ لے رہی، پنجاب میں نیب کی کاروائیوں پر وزراءکا ردعمل ظاہر کرتا ہے کہ بہت کچھ ہے: خورشید شاہ

آج کل سیاست روز نیا موڑ لے رہی، پنجاب میں نیب کی کاروائیوں پر وزراءکا ردعمل ...
آج کل سیاست روز نیا موڑ لے رہی، پنجاب میں نیب کی کاروائیوں پر وزراءکا ردعمل ظاہر کرتا ہے کہ بہت کچھ ہے: خورشید شاہ

  

سکھر (مانیٹرنگ ڈیسک) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا ہے کہ آج کل سیاست روز نیا موڑ لے رہی ہے، پنجاب میں نیب کی کارروائیوں کے بعد وزراءکا ردعمل ظاہر کرتا ہے کہ بہت کچھ ہے ۔ پنجاب اسمبلی کے حالیہ پاس ہونے والے بل کے بعد مجھے تو دو کڑے پڑیں گے۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ نیب کو اپنا کام کرنے دیا جائے، چھوٹے صوبوں میں کارروائی ہو ئی تو وفاق نے کہا کہ نیب کو کارروائی کرنے دی جائے لیکن جب پنجاب میں کارروائی کی گئی تو لوگ طیش میں آ گئے، نیب کی پنجاب میں کارروائیوں کے بعد وزراءکا ردعمل ظاہر کرتا ہے کہ بہت کچھ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کا ملبہ شہباز شریف پر آنے لگا تو رخ موڑ دیا گیا اور جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ روک لی گئی۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پنجاب کا صوبائی بجٹ 400 ارب روپے ہے اور اورنج ٹرین منصوبے کا تخمینہ 200 ارب روپے ہے جبکہ لاہور کا بجٹ جنوبی پنجاب سے 3 گنا زیادہ ہے اور اسلام آباد کی ایک میٹرو بس ایک ارب روپے میں پڑ رہی ہے۔ ایل این جی کی درآمد سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ ایل این جی کی 1700 بلین کی ڈیل ہے اور اس میں کرپشن ہے یا نہیں اس سے متعلق نہیں پتہ البتہ ایل این جی منصوبے پر ہمیں پارلیمینٹ میں نہیں بتایا گیا۔

پنجاب اسمبلی میں خواتین پر تشدد کے حوالے سے پاس ہونے والے بل پر گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ مجھے تو دو کپڑے پہننے پڑیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ پنجاب اسمبلی میں پاس ہونے والے بل پر ہم مرد حضرات بیٹھ کر غور کریں گے۔

مزید : قومی /اہم خبریں