سانحہ شبقدر ،ملک بھر کے وکلاءہڑتال کریں گے ،پاکستان بار کونسل نے کال دے دی

سانحہ شبقدر ،ملک بھر کے وکلاءہڑتال کریں گے ،پاکستان بار کونسل نے کال دے دی
سانحہ شبقدر ،ملک بھر کے وکلاءہڑتال کریں گے ،پاکستان بار کونسل نے کال دے دی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )پاکستان بار کونسل نے خیبر پختونخوا میں شبقدر سیشن کورٹ پردہشت گردوں کے حملہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے 8مارچ کو ملک بھر کے وکلاءکو ہڑتال کی کال دے دی ہے ۔لاہور ہائی کورٹ بار نے بھی وکلاءسے ہڑتال کی اپیل کی ہے ،پاکستان بار کونسل کے وائس چیئر مین ڈاکٹر محمد فروغ نسیم اور ایگزیکٹو کمیٹی کے چیئرمین عبدالفیاض نے اس حملہ میں انسانی جانوں کے زیاں پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے جاں بحق ہونے والوں کے اہل خانہ اور زخمی ہونے والے شہریوں ،وکلاءاور پولیس والوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے ہڑتال کی کال دی ہے جبکہ اس سانحہ کو وفاقی اور خیبر پختونخوا کی حکومتوں کی ناکامی قرار دیا ہے ۔انہوں نے کہا ہے کہ شہریوں کی زندگیوں کی حفاظت کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے جس میں وفاقی اور صوبائی دونوں حکومتیں ناکام رہی ہیں ۔انہوں نے وکلاءسے اپیل کی ہے کہ 8مارچ کو بازﺅں پر سیاہ پٹیاں باندھی جائیں اور بار رومز پر کالے پرچم لہرائے جائیں ۔انہوں نے مزید کہا ہے کہ اس دہشت گردی کے خلاف باروں میں قراردادیں بھی منظور کی جائیں۔لاہور ہائی کورٹ بار کے سیکرٹری انس غازی نے پاکستان بار کونسل کی کال کی روشنی میں وکلاءسے ہڑتال کی اپیل کی ہے ،انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ میں ارجنٹ کیسوں کے سوا کسی مقدمہ میں کوئی وکیل پیش نہیں ہوگا ۔

مزید : لاہور