جتوئی ‘ 4 سالہ بچے کی انگلیاں کاٹنے والے سکول نائب قاصد کو بچانے کی کوششیں

جتوئی ‘ 4 سالہ بچے کی انگلیاں کاٹنے والے سکول نائب قاصد کو بچانے کی کوششیں

جتوئی ( نامہ نگار) چار سالہ محمد احمد کی انگلی کاٹنے والہ شخص نائب قاصد ہائی سکول بیر بند کے ہیڈ ماسٹر کی پناہ سے سکول حاضری کا لیٹر جاری کر دیا تفصیلات کے مطابق بیر بند ہائی سکول کے ہیڈ ماسٹرمحمد ہاشم مکول نے چار سالہ معصوم بچے کی انگلیاں کاٹنے والے نائب قاصد عبدالعزیز بانہ رویہ کے حق میں سکول حاضری کا فرضی لیٹر جاری کر دیا نائب قاصد وقوعہ کے وقت سکول میں موجود تھا اور شام پانچ بجے تک نائب(بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

قاصد عبدالعزیز سکول میں موجود تھا نائب قاصد کو ایس ایچ او تھانہ شہر سلطان منیر چانڈیہ کی ہدایت کے مطابق سکول سے یہ فرضی لیٹر بنوانے کا حکم ہوا اور سکول کے ہیڈ ماسٹر محمد ہاشم مکول نے حاضری فرضی لیٹر بنا دیا متاثرہ چار سالہ محمد احمد کے والد محمد اختر نے بتلایا کہ سکول سے جاری کردہ فرضی لیٹر جاری ہوا ہے ہم غریب لوگ ہے ہمیں انصاف فراہم کیا جائے نائب قاصد کے ساتھ سیاسی و سماجی شخصیات کے علاوہ ہیڈ ماسٹر غیر قانونی اختیارات استعمال کرتے ہوئے اپنے نائب قاصد کو بچانے پر تلا ہوا ہے ہیڈ ماسٹر کے جاری کردہ فرضی لیٹر کے خلاف ڈی سی مظفر گڑھ اور ڈی پی او مظفر گڑھ کو تحریری درخواست میں موقف اختیار کرتے ہوئے بتایا کہ پاکستان کا کونسا سکول کھلا ہوا ہوتا ہے اور عبدالعزیز نائب قاصد اور محمد فہیم اقوام بانہ رویہ نے میرے بچے کی انگلیاں چھری سے کاٹی ہے اس واقع سے تین کلو میٹر کے فاصلے پر سکول ہے مقدمہ میں چار بجے کا واقع اندراج ہے جبکہ سکول اڈھائی بجے تک کھلا رہتا ہے سکول کے نائب قاصد جو ہیڈ ماسٹر محمد ہاشم مکول کو من پسند کے کھانے اور اپنے گھر سے دودھ اور مختلف اشیاء4 مفت میں دیتا ہے اور سکول میں ڈیوٹی نہ کرتا علاقہ کے سکول میں پڑھنے والے بچے اس نائب قاصد سے خوفزدہ ہو گئے ہے میری اعلیٰ حکام سے مطالبہ ہے کہ اس کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر