”نوازشریف نے جیل سپریٹنڈنٹ کو بلایا اور وصیت کی کہ اگر میں میری موت واقع ہو جائے تو میری میت ۔۔“سینئر صحافی نصراللہ ملک نے انتہائی حیران کن دعویٰ کر دیا

”نوازشریف نے جیل سپریٹنڈنٹ کو بلایا اور وصیت کی کہ اگر میں میری موت واقع ہو ...
”نوازشریف نے جیل سپریٹنڈنٹ کو بلایا اور وصیت کی کہ اگر میں میری موت واقع ہو جائے تو میری میت ۔۔“سینئر صحافی نصراللہ ملک نے انتہائی حیران کن دعویٰ کر دیا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سینئر صحافی و تجزیہ کار نصراللہ ملک نے انکشاف کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف نے جیل سپرٹینڈنٹ کو اپنے پاس بلا کر وصیت کی ہے کہ اگر میری موت واقع ہو جاتی ہے تو میری میت کو جلدی گھر پہنچا دینا۔

تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل ’’ نیو نیوز‘‘ کے سی ای او اور سینئر صحافی نصراللہ ملک نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی بیماری شدید بڑھ چکی ہے اور ان کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جس کی وجہ سے پورے خاندان میں بھی بڑھی تفتیش پائی جاتی ہے۔نصراللہ ملک نے کہا گزشتہ دنوں ہم نے ان کے فیملی کے قریبی ذرائع سے ملاقات کی جس میں انہوں نے بتایا ہے کی دن میں کئی بار نواز شریف کو انجائنا کی تکلیف ہوتی ہے اور وہاں پر علاج نا ہونے کی وجہ سے اس بات کا خدشہ پیدا ہوتا ہے کہ کسی وقت بھی ان کو شدید ہارٹ اٹیک ہو سکتا ہے۔

سینئر صحافی نصر اللہ ملک نے کہا کہ نوازشریف کے جو ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے بھی بار بار اس طرف توجہ دلوائی کہ نواز شریف کے دو بائی پاس ہو چکے ہیں اور ان کی جو اَب کنڈیشن ہے ان کو کسی ٹائم بھی ہارٹ کا شدید مرض لاحق ہو سکتا ہے لیکن اس طرف ابھی تک کوئی توجہ نہیں دی گئی۔

نصراللہ ملک نے کہا کہ نواز شریف کے خاندانی ذرائع کا یہ کہنا تھا کہ میاں نواز شریف کوانجائنا کی جو تکلیف ہوتی ہے اس کے ساتھ ساتھ کڈنی پراس کا بڑا اثر ہوا ہے ان کو  اس بات کا بھی شدید خدشہ موجود ہے کہ ان کو ڈئلسیز کی طرف نا جانا پڑے، پچھلے دنوں میاں نواز شریف نے سپرٹینڈنٹ جیل کو اپنے پاس بلویا اور کہا کہ میں ملک کا تین بار وزیراعظم رہا ہوں ، اگر میری اچانک موت ہو جائے تو میر ی میت کو جلدی گھر پہنچا دینا اور جو قانونی کارروائی ہے اسے فوری پورا کیا جائے اور اس معاملے میں زیادہ تاخیر نہ کی جائے۔

ویڈیو دیکھیں:

مزید : قومی