باپردہ خواتین’انتشار مارچ‘‘کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار‘ انتظامات مکمل

باپردہ خواتین’انتشار مارچ‘‘کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار‘ انتظامات مکمل

  



ملتان (سٹی رپورٹر)ملی یکجہتی کونسل جنوبی پنجاب کے صدر میاں آصف محمود اخوانی، سیکرٹری جنرل محمد ایوب مغل،جمعیت علماء اسلام (ف) کے رہنما حافظ شیخ محمد عمر،شیعہ(بقیہ نمبر11صفحہ12پر)

علماء کونسل کے رہنما بشارت عباس،مرکزی اہل جمعیت اہل حدیث کے رہنماعلامہ خالد محمود ندیم،سابق صدر ڈسٹرکٹ بارحافظ اللہ دتہ کاشف بوسن ایڈووکیٹ،صدر قومی تاجراتحادسلطان محمود ملک، جمعیت علماء پاکستان کے رہنما شفیق اللہ بدری، تحریک منہاج القر آن کے رہنما راؤ عارف رضوی،مرکزی میلا دکمیٹی رکن الدین حامدی نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہ ہے کہ 8 مارچ کو ہونے والے عورت مارچ کے نام پراتین محمد عربیؐ کے اُمتیوں کے جذبات کو مجروح کر کے ملک میں انتشار اور فساد پید ا کرنا چاہتی ہیں۔ ہم وزیر اعظم پاکستان اور مقتدر اداروں کو یاد کرواناچاہتے ہیں کہ قائد اعظم ؒ نے قیام پاکستان کے مقاصدبیان کرتے ہوئے فرمایا کہ پاکستان کو ہم اسلام کی ایک ایسی تجربہ گاہ بنانا چاہتے ہیں کہ جو پوری دنیا کے لیے اسلامی نظام حکومت کا عملی شاندار نمونہ پیش کرے۔لہٰذا ہم حکمرانوں اور مقتدر اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ خلاف اسلام سرگرمیوں میں ملوث ان اسلام دشمن خواتین کو دستور پاکستان کے مطابق ایسی سزا دی جائے کہ آئندہ کوئی بھی اس ملک کے اندر شعائر اسلام کا مذاق اڑانے کی جرات نہ کر سکے پاکستان کی عورتوں کی اکثریت اللہ اور اس کے رسولؐ کی جانب سے ان کو دی جانے والی شرم و حیا کی چادر کو اوڑھنے میں فخر محسوس کرتی ہیں۔ ہم مغرب کے دلدادہ دانشوروں خواتین اور بے حیائی کو ہوا دینے والی این جی اوز کو چیلنج کرتے ہیں کہ وہ ملک کی خواتین کے تعلیمی اداروں اور یونیورسٹیز میں عوامی ریفرنڈم کر وا کر دیکھ لیں کہ یہ آوارہ منش خواتین آٹے میں نمک کے برابر بھی نہیں ہیں ملی اگر اس مارچ کو نہ روکا گیا تو مسلمان نوجوان بزور قوت اس کو روکیں گے۔ لہٰذا حکومت وقت کو پاکستان دشمنوں کی سازش کو ناکام بنانا چاہیے۔ 8 مارچ کو پاکستان کی با پردہ خواتین 8 مارچ کو ملک بھر میں ریلیوں اور کانفرنسز کا انعقاد کر کے ثابت کریں گی کہ پاکستان کی خواتین کی اکثریت اللہ اور اس کے رسولؐ کی قائم کردہ شرم و حیا کی حدود کی پابند ہیں۔ اسی سلسلے میں ملتان آرٹس کونسل میں ہونے والے خواتین کانفرنس میں خواتین بھر پور شرکت کریں گی۔

بہاولپور‘ خانیوال (بیورو رپورٹ‘ نمائندہ پاکستان) میرا جسم میری مرضی کا نعرہ دین اسلام کے خلاف سازش ہے اللہ کے رسول کے اسلام کا ہر صورت میں تحفظ کیا جائے گا۔(بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

اغیار کی شازشوں کو ہر قسم کی قربانی دیکر ناکام بنائیں گئے۔علماء کرام وڈویثرنل ممبران امن کمیٹی کا ہنگامی اجلاس مقامی ہوٹل میں منعقد ہوا جس میں خطاب کرتے ہوئے ممبر ڈویثرنل امن کمیٹی شیخ ذوالفقار علی رضوی نے کہا اس نعرہ کی پرزور مذمت کرتے ہیں اور ارباب اختیار سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ اسلامی جمہویہ پاکستان کے اندر اس قسم کا نعرہ ناقابل برداشت ہے۔۔ اس قسم کا ایجنڈہ پاکستان کی سر زمین پر نہیں چلنے دیں گئے۔ صوبہ بھر کی طرح خانیوال میں بھی علماء اکرم، سول سوسائٹی ا ور صحافیوں کی جانب سے یوم شرم وحیاء منایا گیا اس سلسلہ میں مولانا فتح محمد حامدی، قاری سیف اللہ عابد، مفتی عمر فاروق، سہیل رضا عابدی، مولانا محمد رمضان قادری، عطاء اللہ بخاری، سول سوسائٹی سمیت صحافی حضرات نے اپنے خطاب میں کہا کہ دین اسلام او ر پاکستان کے امن کے لیے ایک گھناؤنی شازش ہے ملک میں انتشار پھیلانے کی کسی صورت میں اجازت نہیں دی جائے گی۔ جبکہ سول سوسائٹی کے ممبران اور صحافیوں میں امتیاز علی اسد، چوہدری رشید، عدنان سعید چوہدری، صغیر احمد، میاں عبدالوحید، سعید شاہد، اسماعیل تاج، سلیم اختر قریشی، شیخ صابر، سمیت کثیر تعداد نے شرکت کی اور اس واقعہ کی پر زور مذمت کی۔ جبکہ نائب امیر صوبہ جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے نے کہا کہ پاکستان کی بنیاد کلمہ طیبہ ہے یہاں کسی قسم کی فحاشی و عریانی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔چند بیرونی امداد پر پلنے والی این جی اوز کی عورتیں جو حقوق نسواں کے نام پر شور مچاتی ہیں یہ حقیقت میں پاکستان کو فحاشی اور عریانی کے راستہ پر چلانا چاہتی ہیں جسے پاکستان کی باحیاء عورتیں قطعا قبول نہیں کریں گی پاکستان کی خواتین پاکستان اور نظریہ پاکستان سے محبت کرنے والی ہیں 8 مارچ کو لادین عورتوں کا مقابلہ اسلام پسند محب وطن نظریہ پاکستان کی محافظ خواتین اپنی سرگرمیوں سے کریں گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر