ملتان میں یوم شہداء ختم نبوت‘ علماء کی شرکت‘مشن جاری رکھنے کا عزم

ملتان میں یوم شہداء ختم نبوت‘ علماء کی شرکت‘مشن جاری رکھنے کا عزم

  



ملتان (سٹی رپورٹر)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام تحریک ختم نبوت مارچ 1953 ء کے 10ہزار شہداء کی یاد میں یوم شہداء ختم نبوت منایاگیاعظیم الشان قربانیاں (بقیہ نمبر22صفحہ12پر)

دینے پر شہدا کو خراج عقیدت پیش کیا گیا،شہداء ختم نبوت کا مشن جاری رکھنے کا عزم کیا۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی امیراستاذ المحدثین مولانا ڈاکٹر عبدالرزاق اسکندر، نائب امراء مولانا خواجہ عزیز احمد، مولانا پیحافظ محمدناصرالدین خاکوانی، مرکزی سیکرٹری مولانا عزیز الرحمن جالندھری، مولانا اللہ وسایا، مولانا محمداسماعیل شجاع آبادی، مولانا عزیز الرحمن ثانی، مولانا عبدالنعیم، مولانا وسیم اسلم، مولانا محمدانس نے شہداءِ ختم نبوت کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مارچ 1953ء کی تحریک ختم نبوت کے ہزاروں شہداء نے اپنے مقدس لہو سے عقیدہ ختم نبوت و ناموسِ رسالتؐ اور ملک کے اسلامی تشخص کا دفاع کیااور اپنی جانیں قربان کر کے عقیدہ ختم نبوت کی آبیاری کی، مارچ کا مہینہ ہمیں شہداء ختم نبوت کی قربانیوں کی لازوال داستانیں یاددلاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پہلے مارشل لاء کا جبر 1953ء میں تحریک مقدس ختم نبوت پر آزمایا گیا قادیانی دہشت گرد تنظیم فرقان بٹالین نے فوج کی وردیوں میں مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلی اور اس وقت کے حکمرانوں نے ریاستی مشنری کے ذریعے دس ہزار نہتے مسلمانوں کے مقدس خون سے ہاتھ رنگے۔ انہوں نے کہا کہ قادیانی کوئی مذہبی فرقہ نہیں بلکہ انگریز سامراج نے جہاد کی تنسیخ اور مسلمانوں میں تفریق کیلئے اس کا بیج بویا،اکھنڈ بھارت قادیانیوں کا الہامی عقیدہ ہے اور وہ اسی کی تکمیل کیلئے کام کررہے ہیں۔ علماء نے کہا کہ حج انٹری فارم سے ختم نبوت کا حلف نامہ حذف کرنا ایک سوچی سمجھی سازش تھی ایسی ناپاک جسارت میں ملوث قادیانیت نواز عناصر کو بے نقاب کر کے کڑی سزا دی جائے ایسے کرداروں کو سزادلانے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ مقررین نے کہا کہ جھوٹے مدعی نبوت سے دلیل مانگنا بھی کفر ہے تحفظ ختم نبوت کیلئے ہم سب کچھ قربان کرنے کوتیار ہیں۔ کلمہ اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں پہلا وزیر خارجہ ظفراللہ خان قادیانی کو بنادیا گیا جس نے بیرون ممالک سفارت خانوں کو قادیانی تبلیغ کے لئے وقف کردیا ظفراللہ خان نے کراچی کے جلسہ عام میں اپنی سرکاری حیثیت میں اسلام کو مردہ اور قادیانیت کو زندہ مذہب قرار دیا اور آج بھی قادیانی امریکہ، اسرائیل اور بھارت سے مل کر پاکستان کی سلامتی کیخلاف خطرناک سازشیں کررہے ہیں۔

عزم

مزید : ملتان صفحہ آخر