شہباز شریف ہسپتال سے ادویات غائب‘ غریب مریض دھکے کھا کر واپس

شہباز شریف ہسپتال سے ادویات غائب‘ غریب مریض دھکے کھا کر واپس

  



ملتان (سپیشل رپورٹر) نشتر ہسپتال پر بوجھ کم کرنے کیلئے ن لیگی دور حکومت میں بنایا گیا شہر کے درمیان قائم ڈی ایچ کیو شہباز شریف ہسپتال مسائل کا گڑھ بن چکا ہے،ہسپتال کے شعبہ ایمرجنسی اور آوٹ ڈور میں انجکشن ہیپارین،کیپٹوریل،سیپرو،ریجنر لیکٹیٹ،ا یول، نابن, ہیماسل،نوزپا،ٹی ٹی سمیت دیگر موسمی وائر بیماریوں تک کی ادویات نایاب ہو چکی(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

ہیں جبکہ انسولین کی کمی کی شکایات بھی سامنے آ رہی ہیں جبکہ مریضوں کو بمشکل ایک وقت کی دوائی دے کر واپس گھروں کو بھیجا جا رہا ہے جبکہ فنڈز کی کمی کے باعث ہسپتال میں نہ ہی سی ٹی اسکین انسٹال کی جا سکی ہے اور نہ ہی ایم آر آئی مشین موجود ہے،جبکہ ایکسرے اور الٹراساونڈ کی سہولت بھی صرف دن کے اوقات میں میسر ہے جبکہ ایوننگ اور نائٹ شفٹ میں ایکسرے اور الٹراساونڈ کروانے کیلئے بھی مریضوں کو نجی لیبارٹریوں کا رخ کرنا پڑتا ہے جبکہ دن کے اوقات میں رش کے باعث کئی مریض بغیر ایکسرے الٹراساونڈ کے واپس روانہ ہونے پر مجبور ہو جاتے ہیں جبکہ ہسپتال کے انتظامی افسران سرکاری ہسپتال کے انتظامی امور پر توجہ دینے کی بجائے نجی پریکٹس پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں جس کے باعث ہسپتال میں مسائل ختم ہونے کا نام نہیں لے رہے ینگ ڈاکٹرز نے مسائل حل نہ ہونے کی صورت میں سخت لائحہ عمل اپنانے کا عندیہ دیا ہے۔

واپس

مزید : ملتان صفحہ آخر