10ہزار نئی آسامیوں کی اصولی منظوری، پولیس کیلئے وسائل کو کاکردگی سے مشروط کیا جائے گا: عثمان بزدار

  10ہزار نئی آسامیوں کی اصولی منظوری، پولیس کیلئے وسائل کو کاکردگی سے مشروط ...

  



لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے پولیس میں 10,633 منظور شدہ خالی آسامیوں پر بھرتی کیساتھ ساتھ فورس میں 10 ہزار سے زائد نئی آسامیوں کی اصولی منظوری دیتے ہوئے کہا ہے کہ امن و امان کیلئے پولیس کی قربانیوں کی قدر کرتے ہیں لیکن وسائل کو کارکردگی سے مشروط کیا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اعلی سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں پٹرولنگ و آپریشنل امور کیلئے 548 گاڑیاں خریدنے کی منظوری دی گئی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہاکہ پرانی گاڑیوں کی مرمت کیلئے فنڈز مہیا کئے جائیں گے جبکہ45 زیر تعمیر تھانوں کی عمارتوں کو رواں برس مکمل کیا جائے گا اور101 تھانوں کی اپنی عمارتیں بنائی جائیں گی اور اس مقصد کیلئے سرکاری اراضی جلد محکمہ پولیس کو منتقل کر دی جائے گی۔عثمان بزدار نے کہاکہ محکمہ پولیس میں وسائل کی کمی دور کرنے اور استعدادکار بڑھانے کیلئے مرحلہ وار48.5 ارب روپے فراہم کئے جائیں گے جبکہ پہلے مرحلے میں پولیس کو تقریباً ساڑھے 5ارب سے زائد فراہم کئے جائیں گے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہدایت کی کہ پولیس میں میرٹ پر بھرتی کیلئے فول پروف میکانزم وضع کیا جائے جبکہ محکمہ پولیس کی 45 جاری ترقیاتی سکیموں کو جلد از جلد مکمل کرنے کیلئے مرحلہ وار 6 ارب روپے فراہم کئے جائیں گے۔اجلاس کے شرکاء کو انسپکٹر جنرل پولیس شعیب دستگیر نے مالی امور، دستیاب وسائل اور ضروریات کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔دریں اثناء وزیراعلیٰ پنجاب کے زیرصدارت جنوبی پنجاب صوبے کے قیام سے متعلق ایگزیکٹو کونسل کااہم اجلاس منعقد ہوا،جس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام کے حوالے سے امور کا جائزہ لیاگیا۔ اجلاس کے شرکاء نے جنوبی پنجاب صوبے اورجنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام کے حوالے سے تجاویز اورسفارشات پیش کیں۔اجلاس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو جلد آپریشنل کرنے پر اتفاق رائے کیاگیااورجنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام کے حوالے سے مزید مشاورت جاری رکھنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کا قیام صوبے کی طرف پہلا قدم ہوگا، سیکرٹریٹ کے قیام کیلئے فنڈز مختص کردئیے،جنوبی پنجاب کے عوام نے تحریک انصاف کو جو مینڈیٹ دیا ہے اس کی لاج رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ ماضی کی حکومتوں نے سیاسی شو بازی کر کے جنوبی پنجاب کے عوام کو دھوکا دیا۔وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے اجلاس میں خصوصی شرکت کی۔بعدازاں وزیراعلیٰ پنجاب کے زیرصدارت صوبے میں سرمایہ کاری او رسیاحت کو مشترکہ طورپر فروغ دینے کیلئے اقدامات اور جنوبی پنجاب کے سیاحتی مقام فورٹ منرو کے ترقیاتی منصوبوں پر پیش رفت سے متعلق جائزہ اجلاس منعقد ہوا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوبے میں سرمایہ کاری او رسیاحت کے فروغ کیلئے جامع پالیسی بنائی گئی جبکہ سیاحت بڑھنے سے سرمایہ کاری میں اضافہ ہوگا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے فورٹ منرو کا ماسٹر پلان جلدتیار کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ فورٹ منرو کو ماڈل سیاحتی مقام بنائیں گے اورفورٹ منرو کے قدیمی قلعے کوسیاحوں کیلئے پرکشش بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ فورٹ منرو میں میوزیم،لائبریری اور فوڈ کورٹ بنانے کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں اور مختلف پہاڑوں پرآمدو رفت میں آسانی کیلئے فورٹ منرو چیئرلفٹ اورٹرام کے منصوبے کاجائزہ لیا جائے اور فورٹ منرومیں سفاری پارک اورکیمپنگ سائٹس کے لئے اراضی کی نشاندہی کا کام جلد مکمل کیا جائے۔ اجلاس میں ریسٹ ہاؤس کونجی شعبے کے اشتراک سے چلانے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ راجن پورمیں ماڑی کے مقام پر ٹورازم سپاٹ بنایا جائے گا۔ انہوں نے کوہ سلیمان ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا چیئرمین جلد تعینات کرنے کی ہدایت بھی کی۔ اجلاس میں چیئرمین پنجاب سرمایہ کاری بورڈ سردار تنویر الیاس نے بریفنگ دی۔

سردار عثمان

مزید : صفحہ اول